.

مصری اخوان کو تیونس میں سیاسی پناہ نہیں دی جا رہی: النہضہ

سیاسی پناہ دینے کا معاملہ حکومت کے دائرہ اختیار میں ہے: ترجمان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

تیونس کی اسلام پسند حکمران جماعت 'النہضہ' کے ترجمان زیاد العذاری نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو جاری کردہ خصوصی بیان میں بتایا ہے کہ مصر کی اخوان المسلمون سے تعلق رکھنے والے افراد کو ملک میں سیاسی پناہ دینے کا معاملہ زیر غور نہیں، تنظیمی سطح پر اس موضوع پر کوئی بات نہیں ہوئی۔

انہوں نے مزید کہا کہ سیاسی پناہ دینے کا معاملہ سیاسی جماعتوں کی سطح پر نہیں بلکہ تیونس حکومت کے دائرہ اختیار میں آتا ہے.

یاد رہے کہ النہضہ کے سربراہ راشد الغنوشی نے مقامی ریڈیو 'شمس' سے بات کرتے ہوئے امکان ظاہر کیا تھا کہ مصر کی کالعدم دینی سیاسیجماعت کے ارکان کو تیونس میں سیاسی پناہ دی جا سکتی ہے۔النہضہ کی قیادت نے ان خبروں کی بھی تردید کی ہے کہ حکمران جماعت اخوان المسلمون کی بین الاقوامی تنظیم کو تیونس میں کانفرنس منعقد کرانے کا ارادہ رکھتی ہے۔