.

فرانسیسی پرواز کے لیے روس کی فضائی حدود کی بندش

روس کی خلائی گاڑی کو روانہ کرنے کے دوران فرانسیسی طیارے کا رُخ موڑدیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روس کی ایک خلائی گاڑی کو بین الاقوامی خلائی اسٹیشن کے لیے روانہ کرنے کے دوران ائیر فرانس کی شنگھائِی سے پیرس جانے والی پرواز کا رُخ موڑ دیا گیا ہے اور اس کو روس کی فضائی حدود میں داخل نہیں ہونے دیا گیا ہے۔

ائیرفرانس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ پرواز اے ایف 111 کو بدھ کی صبح ایندھن کی کمی وجہ سے جرمنی کے شہر ہیمبرگ میں اتارنا پڑا ہے کیونکہ اس پرواز کا رُخ موڑنے کی وجہ سے اس میں بہت کم ایندھن رہ گیا تھا اور وہ منزل مقصود تک نہیں پہنچ سکتا تھا۔اس طیارے میں چار سو پچانوے مسافر اور عملے کے بائیس ارکان سوار تھے۔

ہیمبرگ ائِیرپورٹ پرائیربس اے 380 نے صبح چھے بجے لینڈ کیا تھا اور یہ پرواز ایندھن لینے کے ڈیڑھ گھنٹے کے بعد پیرس کے لیے روانہ ہوگئی تھی۔ائیر فرانس نے ایک بیان میں کہا تھا کہ روس کی فضائی حدود کو فوجی مشق کے لیے بند کیا گیا تھا۔

تاہم بعد میں کمپنی کی ایک خاتون ترجمان اولی جیندروت نے ایک بیان میں کہا ہے کہ روس نے اپنی فضائی حدود کو سویوز سپیس کرافٹ کو چھوڑنے کے لیے بند کیا تھا۔سویوز کو قزاقستان میں واقع روس کے زیرانتظام بیکانور خلائی اسٹیشن سے بدھ کو علی الصباح تین بج کر سترہ منٹ پر چھوڑا گیا تھا۔