کینیڈا: داعش مخالف امام کو قتل کی دھمکی

ہماری ناک کے نیچے داعش بھرتیاں کر رہی ہے: سید سہروردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

کینیڈا سے تعلق رکھنے والے امام مسجد سید سہروردی جو اپنے عدم تشدد پر مبنی خطبوں کی وجہ سے مشہور ہیں کو اسلامی عسکریت پسند گروہ داعش کی طرف سے قتل کی دھمکی دی گئی ہے، داعش کے بارے میں اطلاع ہے کہ وہ کینیڈا میں عسکریت پسندوں کی بھرتی کر رہی ہے۔

سید سہروردی اسلام سپریم کونسل کینیڈا کے بانی ہیں اور مغربی طاقتوں کو عسکریت پسندوں کے خلاف سخت کارروائی کے لیے کہتے ہیں۔ انہوں داعش کے لیے بھرتیوں کی بھی نشاندہی کی تھی۔

سید سہروردی نے کہا '' میں یہ بات پورے یقین کے ساتھ سمجھتا ہوں کہ داعش کینیڈا میں عسکریت پسند بھرتی کر رہی ہے اور یہ بھرتیاں عین ہماری ناک کے نیچے ہمارے کالجوں اور یونیورسٹیوں میں ہو رہی ہے۔

واضح رہے مغربی ممالک میں داعش کے بڑھتے ہوئے اثرات پر پہلے ہی کافی تشویش پائی جاتی ہے۔ برطانیہ اور فرانس سمیت اکثر ممالک کے عسکریت پسند داعش کا حصہ بن چکے ہیں۔

معلوم ہوا ہے کہ داعش نے فیس بک کے ذریعے سید سہروردی کو دھمکی دی ہے کہ تمہارے خیالات اسلام سے لگا نہیں کھاتے اور تم ایک منحرف امام ہو۔'' نیز داعش نے سید سہروردی کے داعش کے بارے میں خیالات کا بھی برا مانا ہے۔

ان دھمکیوں کے بارے میں کینیڈین امام کا کہنا ہے کہ وہ ان کی پروا نہیں کرتے ہیں۔ ایک اطلاع کے مطابق کینیڈا کے 130 نوجوان داعش کا حصہ بن چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں