مارب میں اتحادیوں کا فضائی حملہ، حوثی رہنما ہلاک

صنعاء ائرپورٹ کے قریب باغیوں کے اسلحہ گودام بمباری سے تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن کے شہر مأرب کے مشرقی علاقے بیحان میں اتحادی طیاروں کے ایک کار پر حملے میں حوثی رہنما محمد ابو مالک اپنے چار ساتھیوں سمیت ہلاک ہو گیا۔

ادھر عرب اتحاد میں شامل لڑاکا طیاروں نے صنعاء کے ہوائی اڈے کے قریب الدیلمی ائر بیس پر آٹھ حملے کئے ہیں جس کے نتیجے میں وہاں منحرف صدر علی عبداللہ صالح اور حوثیوں کی طرف سے چھپایا گیا گولہ بارود اور فوجی ساز وسامان تباہ ہو گیا۔

ایک جگہ سے دوسری جگہ اسلحہ منتقل کرنے والے حوثیوں کے ٹھکانوں پر بھی اتحادی طیاروں نے بمباری کی۔ اس کارروائی کے ذریعے نشانہ بننے والے باغیوں کے جتھے دارلحکومت کے اندر اور باہر اپنی پوزیشنز مضبوط بناتے تھے۔

عرب اتحادیوں کے لڑاکا جہازوں نے صنعاء کے مشرق میں الحفا نامی فوجی کیمپ کو نشانہ بنایا جس سے اسلحہ اور میزائل کے ایک گودام میں زور دار دھماکوں سے پورا شہر لرز اٹھا۔ اس اسلحے کو باغی ملیشیا دوسرے علاقوں تک منتقل کرنا چاہتے تھے۔

عینی شاہدین نے بتایا کہ لڑاکا طیاروں نے پہلی مرتبہ دارلحکومت کے شمال مشرق میں بنی حشیش اور بنی الحارث ڈائریکٹوریٹ میں باغیوں کے ٹھکانوں پر بمباری کی۔

'العربیہ' کے خصوصی ذرائع نے مزید بتایا کہ اتحادیوں کے لڑاکا جہازوں نے تعز کے مغرب میں الخمسین شاہراہ پر نصب سکڈ میزائل لانچنگ پیڈ تباہ کر دیا۔ اس کارروائی کا خصوصی ہدف شہر کے مغربی علاقے کا الضباب فرنٹ اور صدارتی محل کا علاقہ تھے۔

درایں اثناء عوامی مزاحمت کار جنگجوؤں اور قومی فوج نے مارب کے محاذ کی سمت پیش قدمی میں کامیابی کے بعد الحمرء پہاڑی کے قریب واقعہ اسٹرٹیجک اہمیت کے الحجیلی ٹیلے پر پرتشدد لڑائی کے بعد قبضہ کر لیا۔ اس لڑائی میں 20 حوثی باغی ہلاک ہوئے۔

یمن کی سرکاری فوج اور عوامی مزاحمت کاروں نے اتحادی فوج کے تعاون سے مارب میں اہم نوعیت کی پیش قدمی کی ہے۔ اس علاقے میں شدید لڑائی جاری ہے۔

ادھر اتحادی فوج کے اپاچی ہیلی کاپٹروں نے انقلابیوں کے ٹھکانوں کی حتمی صفائی کر دی ہے جس کے بعد سرکاری فوج نے علاقے میں پیش قدمی کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں