.

منشیات اسمگلنگ کیس، وینز ویلا کے نائب صدرامریکا میں بلیک لسٹ

طارق العیسمی کے امریکا میں اثاثے ضبط کرنے کا حکم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا نے وینز ویلا کے نائب صدر طارق العیسمی کو بلیک لسٹ کرتے ہوئے ان کے تمام اثاثے بہ حق سرکار ضبط کرنے کا حکم دیا ہے۔ العیسمی پر الزام ہے کہ امریکا اور دوسرے ملکوں میں منشیات کے دھندے میں ملوث نیٹ ورک کے سہولت کارہیں اور خود بھی منشیات کا دھندہ چلاتے ہیں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق41 سالہ شامی نژاد طارق العیسمی وینز ویلا کی سوشلسٹ پارٹی میں سرگرم رہے۔ وہ ماضی میں وینز ویلا کی ایک ریاست کےگورنر اور وزیرداخلہ بھی رہ چکے ہیں اور اس وقت صدر ماڈورو کے نائب ہیں۔

ذرائع ابلاغ کے مطابق العیسمی پر الزام ہے کہ وہ منشیات اسمگلنگ میں ملوث نیٹ ورک کے مشرق وسطیٰ اور دنیا بھرمیں موجود نیٹ ورک کے کارندوں اور دہشت گردوں کو ویزے فراہم کرتے ہوئے انہیں سفری سہولتیں مہیا کرتے رہے ہیں۔

دوسری جانب سوموار کی شب امریکی حکام نے وینز ویلا کے نائب صدرکے دہشت گردوں اور منشیات کے تاجروں سے رابطوں کی طرف کوئی اشارہ نہیں کیا۔

امریکی وزارت خزانہ کی طرف سے جارہ کردہ با باضابطہ بیان میں کہا گیا ہے کہ العیسمی اور ان کے معاون ’سامارک جوزیے لوبیز بیللو‘ کی جزیرہ ورجن ، پامانا، برطانیہ اور امریکا میں کئی آف شور کمپنیاں ہیں۔ امریکی حکام کے مطابق وینز وینلا کے نائب صدرکی کمپنی کا علاقائی ہیڈ کواٹر ریاست میامی میں قائم ہے اور اس کے اثاثوں کی مالیت دسیوں ملین ڈالر بتائی جاتی ہے۔ وزارت خزانہ کی ہدایت پراس کمپنی کے دفتر کو سیل کرتے ہوئے تمام اثاثے ضبط کرلیے گئے ہیں۔

اسمگلنگ کے لیے فوجی اڈے کا استعمال

حیران کن امر یہ ہے کہ طارق العیسمی نے وینز ویلا کے ایک فوجی ہوائی اڈے کو اسمگلنگ کے لیے استعمال کرنے کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے۔ اس فوجی اڈے سے امریکا، میکسیکو اور دوسرے ممالک سے ٹنوں کے حساب سے اسمگلنگ کی درآمد برآمد کی جاتی ہے۔

شبہ ہے کہ کراکاس ہوائی اڈے کے صدارتی سیکشن کو بھی منشیات کے دھندے کے لیے استعمال کیاجا رہا ہے۔

امریکی حکام کا کہنا ہے کہ العیسمی نے منشیات کے بدنام زمانہ اسمگلر ولید مقلد گاریسا سے بھاری رقوم وصول کی ہیں۔ العیسمی اور مقلد گاریسا کا پس نظر عرب ہے، یہی وجہ ہے کہ وہ دونوں ایک دوسرے کو بھرپور سپورٹ کررہے ہیں۔ یہ الزام بھی عاید کیا جاتا ہے کہ وینز ویلا کے نائب صدر میکسیکو اور کولمبیا کے درمیان منشیات کے تاجروں کی آمد روفت کو تحفظ دے رہے ہیں۔

امریکی حکام کا یہ بھی دعویٰ ہے کہ وینز ویلا کے نائب صدر کو سیاسی بنیادوں پر بلیک لست نہیں کیا گیا اور نہ ہی اس کا تعلق نئی امریکی انتظامیہ کی پالیسی سے ہے۔

منشیات کی اسمگلنگ میں ملوث ہونے کا الزام صرف وینز ویلا کے نائب صدر پرہی عاید نہیں کیا جا رہا ہے بلکہ امریکا کی سرحدی گذرگاہوں اور ہوائی اڈوں کی سیکیورٹی پرمامور سینیر امریکی حکام بھی منشیات کے سودا گروں کو سفری سہولیات فراہم کرنے کا الزام عاید کیا گیا ہے۔