.

عرب اتحاد یمن میں شہریوں پر حملے کی تحقیقات کرے گا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی قیادت میں اتحاد نے کہا ہے کہ وہ ان دعووں کی تحقیقات کرے گا جن میں کہا گیا ہے کہ اس کے لڑاکا طیاروں نے یمنی دارالحکومت صنعا میں شہریوں کے ایک اجتماع کو حملے میں ہدف بنایا ہے۔

عرب اتحاد نے جمعرات کو جاری کردہ ایک بیان میں کہا ہے کہ '' ہم ان میڈیا رپورٹس سے آگاہ ہیں جن میں حوثی ملیشیا کا یہ دعویٰ نقل کیا گیا ہے کہ صنعا کے نزدیک رات ایک فضائی حملے میں متعدد یمنی شہری مارے گئے ہیں۔

بیان کے مطابق ''اس علاقے میں حالیہ دنوں کے دوران میں یمن کی مسلح افواج اور باغیوں کے درمیان جھڑپیں ہوتی رہی ہیں۔ ان کے تعلق سے رپورٹس کی تحقیقات کی جارہی ہے۔اس سلسلے میں جب ہمیں مزید معلومات ملیں گی تو ہم انھیں عوام کے لیے جاری کر دیں گے''۔

ان میڈیا رپورٹس میں یہ الزام عاید کیا گیا ہے کہ سعودی اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے بدھ کی رات یمنی دارالحکومت کے شمال میں ایک مکان کو فضائی حملے میں نشانہ بنایا تھا۔اس وقت وہاں لوگ ایک اجتماع کے سلسلے میں جمع تھے۔

صنعا کے علاقے ارہاب سے تعلق رکھنے والے مقامی شخص کا کہنا تھا کہ فضائی حملے میں ایک مقامی قبائلی سردار کے مکان کو نشانہ بنایا گیا تھا۔