.

یمنی حوثیوں کے سعودی عرب پر داغے گئے ایرانی میزائلوں کا ملبہ ملاحظہ کیجیے !

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں صدر عبد ربہ منصور ہادی کی قانونی حکومت کی حمایت میں حوثی شیعہ باغیوں کے خلاف جنگ آزما عرب اتحاد نے سعودی عرب کی جانب داغے گئے میزائلوں کا ملبہ صحافیوں کو دکھایا ہے اور کہا ہے کہ حوثیوں نے ایران کے مہیا کردہ میزائلوں کو سعودی عرب کی جانب فائر کیا تھا۔

عرب اتحاد کے ترجمان کرنل ترکی المالکی نے سوموار کو ایک نیوز کانفرنس میں سعودی دارالحکومت الریاض کی جانب اتوار کی شب داغے گئے میزائل کا بطور خاص تذکرہ کیا ہے اور بتایا ہے کہ یہ ایرانی ساختہ قیام میزائل تھا۔

انھوں نے نیوز کانفرنس میں اور بھی متعدد میزائل پیش کیے ہیں اور ان کے بارے میں بتایا ہے کہ انھیں یمن میں ایران سے اسمگل کرکے لایا گیا تھا لیکن انھیں حو ثی ملیشیا کے ہاتھ لگنے سے قبل ہی عرب اتحادی فورسز نے اپنے قبضے میں لے لیا تھا۔ان میں ایرانی ساختہ صیّاد (شکاری) میزائل بھی شامل تھا۔

کرنل ترکی المالکی نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ حوثیوں نے سعودی عرب کے مختلف شہروں اور علاقوں کی جانب اب تک 104 بیلسٹک میزائل فائر کیے ہیں ۔

عرب اتحاد کے ترجمان نے متعدد میزائلوں کے ’’والو‘‘ دکھائے ہیں اور ان کے ایرانی ساختہ ہونے کی اور بھی نشانیاں بتائی ہیں۔انھوں نے اس امر کی نشان دہی کی ہے کہ یمن کے حوثی میزائل سازی کی اس طرح کی صلاحیت کے حامل نہیں ہیں اور یہ میزائل خاص طور پر الریاض کو ہدف بنانے اور اس تک پہنچنے کے لیے تیار کیے گئے تھے۔