.

تھائی لینڈ : غار سے بہ حفاظت نکالے گئے نوعمر فٹ بالر اسپتال میں ہشاش بشاش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

تھائی لینڈ کے شمال میں واقع ایک سیلابی غار سے نکالے گئے بارہ لڑکے اسپتال میں ہشاش بشاش دکھائی دیے ہیں اور انھوں نے اس کا اظہار اپنے بستروں پر بیٹھے ہوئے فتح کا نشان بنا کر کیا ہے۔

لڑکوں کی ایک فٹ بال ٹیم کے یہ بارہ کھلاڑی اور ان کا کوچ تھائی لینڈ کے شمالی صوبے چیانگ رائی میں واقع ایک غار میں بارشی پانی بھر جانے کے بعد اٹھارہ روز تک پھنسے رہے تھے اور انھیں سخت جدوجہد اور ایک مشکل امدادی کارروائی کے بعد گذشتہ تین روز میں نکالا گیا ہے۔اب وہ نفسیاتی اور طبی بحالی کے لیے چیانگ رائی کے ایک اسپتال میں زیر علاج ہیں اور انھیں ایک الگ تھلگ کمرے میں رکھا گیا ہے۔

اس کمرے میں لڑکے اور ان کا 25 سالہ کوچ اپنے اپنے بستر پر بیٹھے نظر آرہے ہیں ،ان کے آدھے چہروں پر سرجیکل ماسک چڑھے ہوئے ہیں جبکہ سب سے کم عمر گیارہ سالہ لڑکا سفید چادر اوڑھے سورہا ہے۔

ان کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر جاری کی گئی ہے۔اس میں وہ نرسوں سے گفتگو کرتے ہوئے دیکھے جاسکتے ہیں ۔وہ روایتی تھائی احترام کی علامت کا مظاہرہ کررہے ہیں ۔ یعنی دونوں ہاتھوں کو باندھے سرجھکائے نظر آتے ہیں۔ ان لڑکوں اور ان کے والدین کے درمیان شیشے کی ایک دیوار حائل ہے او ر وہ اسی سے انھیں دیکھ رہے ہیں ۔ان کے والدین کے چہروں پر خوشی کے جذبات نمایاں ہیں ۔

چیانگ رائی کے پراچانوکروح اسپتال کے ڈائریکٹر چائی ویچ تھانا پیسال نے ایک نیوز کانفرنس میں کہا کہ ’’ ان کی جسمانی اور نفسیاتی صحت کے بارے میں زیادہ مشوش ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔ان میں ہرکوئی دل ودماغ سے مضبوط ہے‘‘۔

چائی ویچ نے بتایا کہ چار لڑکوں اور ان کے فٹ بال کوچ کو منگل کو آپریشن کے تیسرے اور آخری روز نکالا گیا تھا اور انھیں پانی سے بھرے غار سے باہر نکالنے میں دوسرے لڑکوں کی نسبت کم وقت صرف ہوا تھا۔ان سے پہلے اتوار اور سوموار کو چار چار لڑکوں کو تھائی بحریہ کے غوطہ خوروں اور بیرونی امدادی کارکنان نے ایک طویل ، مشکل اور صبر آزما امدادی کارروائی کے بعد نکالا تھا۔

ڈائریکٹر کا کہنا تھا جسمانی اور ذہنی حالت بہتر ہونے کے باوجود لڑکوں کو سات روز تک اسپتال میں رکھنے کی ضرورت ہے۔اس کے بعد تیس روز تک انھیں اپنے اپنے گھروں میں آرام کرنا ہوگا۔ انھوں نے مزید بتایا کہ ان میں سے تین لڑکوں کے پھیپھڑوں میں معمولی انفیکشن ہوگئی ہے۔

غار سے ان لڑکوں کو نکالنے میں مرکزی کردار ادا کرنے والے تھائی لینڈ کے نیوی سیلز نے فیس بُک پر اتوار کو ایک ویڈیو جاری کی ہے۔ اس میں ایک لڑکے کو دلدلی غار سے ایک اسٹریچر پر نکالا جارہا ہے اور اس کو ایک ہنگامی تھرمل کمبل میں ڈھانپا ہوا ہے۔