.

ترکی نے امریکی پادری کی رہائی کو ایک بار پھر مسترد کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

تُرک میڈیا نے بدھ کے روز بتایا ہے کہ اِزمیر شہر کی عدالت نے زیر حراست امریکی پادری کی رہائی کی درخواست ایک مرتبہ پھر مسترد کر دی ہے۔

سرکاری ٹیلی وژن کے مطابق اینڈرو برینسن بدستور نظربند رہے گا۔

وہائٹ ہاؤس کے ایک ذمّے دار کے مطابق امریکا نے ترکی کو خبردار کر دیا ہے کہ اگر اُس نے امریکی پادری کو رہا کرنے سے انکار کیا تو انقرہ پر مزید اقتصادی دباؤ ڈالا جائے گا۔ اس تنازع نے دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات میں کشیدگی کو بڑھا دیا ہے۔

یہ دو ٹوک پیغام وہائٹ ہاؤس میں امریکی قومی سلامتی کے مشیر جون بولٹن اور واشنگٹن میں ترکی کے سفیر سردار قلیچ کے درمیان خفیہ ملاقات کے بعد سامنے آیا ہے۔ ملاقات میں امریکی پادری اینڈرو برینسن کا معاملہ زیر بحث آیا تھا۔

ایک اعلی امریکی عہدے دار کے مطابق بولٹن نے ترک سفیر کو خبردار کیا کہ امریکا کسی قسم کی رعایت پیش نہیں کرے گا۔

عہدے دار نے بتایا کہ اضافی اقدامات اقتصادی پابندیوں کی صورت میں سامنے آ سکتے ہیں۔

ڈونلڈ ٹرمپ گزشتہ ہفتے ترکی سے درآمد کیے جانے والے اسٹیل اور المونیم پر ٹیکس کی رقم میں اضافہ کر چکے ہیں۔ اس اقدام نے ترکی کی کرنسی کی قدر میں خاصی کمی واقع ہونے میں اہم کردار ادا کیا۔

امریکی پادری پر الزام ہے کہ اس نے دو برس قبل ترک صدر رجب طیب ایردوآن کے خلاف انقلاب کی کوشش کو سپورٹ کیا تھا۔ تاہم امریکی پادری اس الزام کی تردید کرتا ہے۔