امریکا کا چین پر سائبرحملوں کے لیے ہیکروں کی معاونت کا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکی وزارت انصاف نے چین پر بین الاقواہی ہیکروں کی معاونت اور امریکی کمپنیوں کا ڈیٹا ہیک کرنے کا الزام عاید کیا ہے۔

جمعرات کے روز امریکی وزارت انصاف کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں‌ کہا گیا ہے کہ امریکا کی پرائیویٹ کمپنیوں اور حکومتی ایجنسیوں کے نیٹ ورک تک رسائی میں دو چینی باشندوں پر ہیکلنگ کا الزام ثابت ہوا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ چینی ہیکروں‌نے امریکا کے خلائی تحقیقاتی ادارے 'ناسا' اور امریکی بحریہ کی ویب سائیٹس کو ہیک کرنے کے ساتھ ساتھ مرکزی بنکوں اور 12 ممالک کی مواصلاتی کمپنیوں کو ہیک کرنے کی کوشش کی تھی۔

دوسری جانب چین نے امریکا کی طرف سے ہیکروں کی معاونت کے الزامات مسترد کردیے ہیں اور کہا ہے کہ واشنگٹن خود حقائق کو مسخ کرنے اور بیجنگ کو بدنام کرنے کی مہم جاری رکھے ہوئے ہے۔

امریکی نائب وزیر انصاف روڈ رزوزنسٹین نے کہا کہ چینی حکومت سنہ 2015ء کے دوران صدر شی جن پنگ کی جانب سے کیے گئے عہد کی خلاف ورزیاں کررہا ہے۔ چینی صدر نے امریکا کویقین دلایا تھا کہ وہ امریکی کمپنیوں اور اداروں پر سائبرحملوں میں معاونت نہیں کرے گا۔

انہوں نے کہا کہ یہ بات نا مناسب ہے کہ ہم بار بار چین کےدوسرے ممالک کے خلاف سائبر جرائم کا پردہ چاک ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں