الجزائر میں افراتفری پھیلانے کے الزام میں کئی غیر ملکی گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

الجزائر میں پولیس نے ملک میں افراتفری پھیلانے اور مظاہروں کی آڑ میں ملک میں بدامنی کو ہوا دینے کے الزام میں متعدد غیر ملکیوں کو حراست میں لے لیا ہے۔

العربیہ کے مطابق الجزائری سیکیورٹی فورسز کی طرف سے جمعہ کے روز جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ گذشتہ مظاہروں کی آڑ میں پولیس اہلکاروں‌ پر حملوں میں کم سے کم 83 پولیس اہلکار زخمی ہوگئے۔ پر تشدد مظاہروں کے بعد فورسز نے 180 مشتبہ افراد کو حراست میں لیا ہے۔ یہ لوگ مظاہروں اور احتجاج کی آڑ‌میں سیکیورٹی فورسز کے خلاف حملوں میں ملوث تھے۔

سیکیورٹی فورسز کا کہنا ہے کہ گرفتار دہشت گرد گروپ میں غیر ملکی شامل ہیں۔ وہ ملک میں دہشت گردی اور افراتفری پھیلانے کے لیے بیرون ملک سے بھیجے گئے ہیں۔

سیکیورٹی فورسز کا کہنا ہے کہ شہریوں کو احتجاج اور مظاہروں کی اجازت ہے مگر نقل وحرکت کی آزادی اور شہریوں کی جان ومال کو نقصان پہنچانے کی قیمت پر کسی کو احتجاج کا حق نہیں دیا جائے گا۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ سیکیورٹی فورسز نے الجزائر میں مظاہرین کی صفوں میں گھسے غیر ملکی دہشتگردوں‌ کو پکڑ کر ملک میں مجرمانہ واقعات اور دہشت گردی کی غیر ملکی سازش ناکام بنا دی ہے۔ گرفتار افراد کے قبضے اسلحہ بھی برآمد کیا گیا ہے۔

الجزائر میں 'العربیہ' کے نامہ نگار کے مطابق جمعہ کے روز پر تشدد مظاہروں کے بعد اب حالات قدرے پرسکون ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں