.

کرونا وائرس : دنیا بھر میں اموات کی تعداد 4.5 لاکھ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دنیا بھر میں کرونا وائرس کے سبب موت کا شکار ہونے والے افراد کی مجموعی تعداد 4.5 لاکھ کی حد عبور کر گئی ہے۔ یہ تعداد آخری ڈیڑھ ماہ کے دوران بڑھ کر دو گنا ہو گئی۔ یہ بات فرانس پریس کی جانب سے جمعرات کو گرینچ کے وقت کے مطابق شام 4:15 پر جاری اعداد و شمار میں بتائی گئی ہے۔ یہ اعداد و شمار دنیا بھر میں سرکاری ذرائع سے حاصل معلومات کی بنیاد پر تیار کیے گئے۔

دسمبر 2019 میں چین میں کرونا وائرس ظاہر ہونے کے بعد سے اب تک دنیا بھر میں اس وائرس کے 8395929 کیسوں کا اندراج ہو چکا ہے۔ ان میں سے 450004 افراد اس دنیا سے رخصت ہو گئے۔

دنیا بھر میں سب سے زیادہ اموات براعظم یورپ میں واقع ہوئیں۔ یہاں کُل 2469242 متاثرین میں سے 190112 افراد زندگی کی بازی ہار چکے ہیں۔ تاہم لاطینی امریکا میں اب یہ وبائی مرض انتہائی تیزی سے پھیل رہا ہے۔ اس براعظم میں کرونا کے 1840488 متاثرین اور 86706 اموات کا اندراج ہوا ہے۔

گذشتہ صرف 11 روز میں دنیا بھر میں کرونا کے سبب 50 ہزار سے زیادہ اموات واقع ہوئیں۔

اموات اور متاثرین کی سب سے بڑی تعداد کے لحاظ سے امریکا کا دنیا بھر میں پہلا نمبر ہے۔ جان ہوپکنز یونیورسٹی کے اعداد و شمار کے مطابق ملک مین کرونا کے 2164497 مصدقہ کیس سامنے آ چکے ہیں۔ ان میں سے 117832 مریض اپنی جانوں سے ہاتھ دھو چکے ہیں۔

امریکا کے بعد دوسرا نمبر برازیل کا ہے۔ یہاں کرونا کے سبب مرنے والوں کی سرکاری تعداد 46510 تک پہنچ گئی ہے۔ برازیل کے بعد برطانیہ 42288 اموات کے ساتھ تیسرے، اطالیہ 34514 اموات کے ساتھ چوتھے، فرانس 29575 اموات کے ساتھ پانچویں اور ہسپانیہ 27136 اموات کے ساتھ چھٹے نمبر پر ہے۔

آبادی کے لحاظ سے اموات کا سب سے زیادہ تناسب یورپ کے ملک بیلجیم میں سامنے آیا ہے۔ یہاں ہر ایک لاکھ افراد میں کرونا کے سبب 84 اموات کا تناسب ہے۔ برطانیہ میں یہ تناسب 62 اموات، ہسپانیہ میں 58 اموات، اطالیہ میں 57 اموات اور سویڈن میں 50 اموات ہے۔

لاطینی امریکا اور کیریبیئن میں یومیہ اموات کی سب سے بڑی تعداد ریکارڈ کی جا رہی ہے۔ بدھ 17 جون کو یہاں 2678 اموات کا اندراج ہوا۔ اس کے مقابل اسی روز ایشیا میں 2260 اموات، امریکا اور کینیڈا میں 771 اموات اور یورپ میں 485 اموات سامنے آئیں۔