دبئی پولیس کے افسر کی سرکاری فرائض کی انجام دہی کے وقت فلم بنانے والی دو خواتین گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امارت دبئی میں ڈیوٹی پر موجود ایک پولیس افسر کی ویڈیو بنانے اور اس کو سوشل میڈیا پر پوسٹ کرنے کے الزام میں دو خواتین کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

اطلاع کے مطابق ان دونوں عورتوں نے پولیس افسر کی ایک مشتبہ ملزم کو ہتھکڑی لگاتے ہوئے ویڈیو بنائی تھی۔

دبئی پولیس کے شعبہ تفتیش جرائم کے سربراہ بریگیڈئیر جمال الجلاف نے کہا ہے کہ ان دونوں عورتوں نے انفارمیشن ٹیکنالوجی کے جرائم سے متعلق قانون نمبر 5 مجریہ 2012ء کی خلاف ورزی کی اور دوسروں بالخصوص ایک پولیس افسر کی نج کی زندگی میں ایسے وقت میں مداخلت کا ارتکاب کیا ہے جب وہ اپنے پیشہ ورانہ سرکاری فرائض انجام دے رہا تھا۔

دبئی پولیس نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ان دونوں عورتوں کو یو اے ای کے سائبر جرائم کے قانون کی دفعہ 21 کے تحت کم سے کم چھے ماہ قید اور ڈیڑھ لاکھ سے پانچ لاکھ درہم تک جرمانے کی سزا کا سامنا ہوسکتا ہے۔

بیان میں یہ نہیں بتایا گیا ہے کہ پولیس افسر کی فلم بنانے کا یہ واقعہ کب رونما ہوا تھا۔ دونوں عورتوں کی قومیت بھی ظاہر نہیں کی گئی ہے۔

جمال الجلاف نے لوگوں پر زوردیا ہے کہ وہ دوسروں کی نج کی زندگی کا احترام کریں اور دوسرے افراد کی ویڈیوز اور تصاویر سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر پوسٹ نہ کریں۔نیز پولیس کے سکیورٹی آپریشنز کو ریکارڈ کرنے سے گریز کیا جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں