.
افغانستان وطالبان

افغان شہریوں کی جانب سے طالبان کو سرخ اور سفید پھول پیش

روایتی طور پر سرخ اور سفید پھول دوستی اور معافی کی علامت سمجھے جاتے ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغانستان کے دارالحکومت کابل پر طالبان کے کنٹرول حاصل کرنے کے بعد ملک میں رہنے کو ترجیح دینے والے بیشتر افغان شہریوں نے طالبان جنگجوئوں کا افغانستان میں دوستی اور معافی کی علامت سننے والے سرخ اور سفید گلاب سے استقبال کررہے ہیں۔

فوٹیج میں مردوں اور لڑکوں کو طالبان جنگجوئوں کو علامتی رنگ کے پھو دیتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

برطانوی آن لائن اخبار دی میل کے مطابق خوفزدہ شہری مختلف چوراہوں اور چوکیوں پر تعینات طالبان اہلکاروں کے پاس جاکر پھول پیش کررہے ہیں۔ افغان روایات کے مطابق سرخ اور سفید پھول دوستی اور معافی کی علامت سمجھے جاتے ہیں۔

کابل کے خوفزدہ خاندان طالبان کو پھول پیش کر کے ان کے ساتھ دوستی کا ہاتھ بڑھانا اور تعلقات کے پل استوار کرنا چاہتے ہیں تاکہ ان کے نئے حکمران ان کے خلاف کوئی انتقامی کارروائی نہ کریں۔

افغان ثقافت میں سرخ گلاب دوستی کی علامت ہے جبکہ سفید پھول کا مطلب ہے معافی۔

طالبان کے آخری دور میں افغانستان کے باغات کو نظر انداز کردیا گیا تھا پھول تقریبا ختم ہوگئے تھے۔

بہت سے شہری اب بھی تذبذب کا شکار ہیں کہ آیا طالبان خواتین اور لڑکیوں کو کام کرنے اوو تعلیم حاصل کرنے دیں گے؟ ماضی میں طالبان مغرب کے حامی مردوں اور عورتوں کو نشانہ بناتے رہے ہیں۔