روس اور یوکرین

مکڈونلڈز کی بندش کے خلاف روسی شہری کا خود کو زنجیروں میں جکڑ کر احتجاج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مشہر غیرملکی فوڈ چین مکڈونلڈز سمیت غیر ملکی کمپنیوں کے ایک گروپ کی جانب سے یوکرین میں فوجی آپریشن کے ردعمل میں روس میں اپنی سروسز معطل کیے جانے کے بعد مقامی شہریوں کی طرف سے احتجاج دیکھا جا رہا ہے۔ بہت سے روسی غیرملکی فاسٹ فوڈ بالخصوص مکڈونلڈ کے رسیا ہیں۔ مکڈونلڈ کی سروسز کی بندش پروہ سراپا احتجاج ہیں۔ ایک فربہ روسی نے تو احتجاج کرتے ہوئے مکلڈونلڈ کے ریستوران کے گیٹ پر خود کو زنجیروں میں جکڑ کر احتجاج ریکارڈ کرایا۔

مک ڈونلڈز کے ایک دیوانے ماسکو میں ایک فاسٹ فوڈ ریستوران کو بند ہونے سے روکنے کے لیے اس کے دروازے پر خود کو زنجیروں میں جکڑ لیا۔

برطانوی اخبار "مرر" کے مطابق روسی شخص جس کا نام لوکا سیفرونوف بتایا جاتا ہے کو اتوار کو ریستوران کے سامنے احتجاج کرتے دیکھا گیا۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں اسے چیختے ہوئے یہ کہتے سُنا جا سکتا ہے کہ فاسٹ فوڈ چین کے ریستوران کی بندش میرے اور میرے ساتھی شہریوں کے خلاف دشمنی ہے۔

تاہم بالآخر پولیس اس کے پاس پہنچی اور اسے ریستوران سے لے گئی۔

مکڈونلڈ تمام شاخیں بند

قابل ذکر ہے کہ فاسٹ فوڈ کمپنی مکڈونلڈز نے منگل کو اعلان کیا کہ وہ روس میں اپنی شاخیں عارضی طور پر بند کر دے گی۔

مک ڈونلڈز کے سی ای او کرس کیمپزنسکی نے ایک بیان میں کہا کہ مک ڈونلڈز نے روس میں اپنے تمام ریستوران عارضی طور پر بند کرنے اور مارکیٹ کے تمام کاموں کو عارضی طور پر روکنے کا فیصلہ کیا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ یوکرین پر ماسکو کے حملے کے بعد متعدد صنعتوں میں متعدد غیر ملکی کمپنیوں نے روس میں اپنا کام معطل کر دیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں