اسرائیلی انتہا پسند گروپ کو بلیک لسٹ کرنے پرفلسطینی اتھارٹی کی امریکا پر تنقید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

امریکی حکومت کی طرف سے ایک انتہا پسند اسرائیلی تنظیم’کاخ‘ کو دہشت گردی کی عالمی فہرست سے نکالنے کے اعلان پرفلسطینی حلقوں کی طرف سےسخت رد عمل سامنے آیا ہے۔

ہفتے کے روز فلسطینی ایوان صدر نے کانگریس کی منظوری کے بعد غیر ملکی دہشت گرد تنظیموں کی فہرست سے اسرائیلی کاخ تحریک نکالنے کے اعلان کی مذمت کی۔

فلسطینی خبر رساں ایجنسی نے ایوان صدر کے حوالے سے بتایا ہے کہ امریکی انتظامیہ سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ فلسطین لبریشن آرگنائزیشن کو دہشت گردی کی فہرست سے نکالے۔

فلسطینی ایوان صدر نے کانگریس کے فیصلے کو اسرائیلی انتہا پسند گروپ کے کارکنوں کے لیے "انعام" قرار دیا۔ بیان میں امریکی حکومت کی طرف سے انتہا پسند گروپ کو بلیک لسٹ سے نکالنے کے وقت اوراس کی وجوہات پر بھی حیرت کا اظہار کیا۔

خیال رہے کہ جُمعے کو امریکی محکمہ خارجہ نے پانچ دہشت گرد تنظیموں کو بلیک لسٹ سے نکالنے کا اعلان کیا تھا۔ ان میں مصر کی شدت پسند تنظیم جماعت اسلامی، یہودی کاخ گروپ، مجاھدین شوریٰ کونسل جیسے گروپ شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں