بائیڈن منگل کو کرونا ویکسین کی نئی اپ ڈیٹ شدہ خوراک لیں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اتوار کے روز وائٹ ہاؤس کے ترجمان کیون مونوز نے اعلان کیا کہ امریکی صدر جو بائیڈن منگل کو کووِڈ 19 وائرس کے لیے ایک تازہ ترین ویکسین لیں گے۔ انہوں نے مزید تاکید کی کہ تمام امریکیوں کو نئی اپ ڈیٹڈ خوراک لینے کی ضرورت ہے۔

وائٹ ہاؤس کی ترجمان کیرن جین پیئر نے جمعرات کو کہا تھا کہ پچھلے ہفتے امریکہ میں صرف 20 ملین لوگوں کو کووڈ 19 کیلئے نئی اپ ڈیٹڈ ویکسین موصول ہوئی ہے اور یہ کافی نہیں ہے،

"سب کے لیے ایک ویکسین"

انہوں نے مزید کہا کہ ہر ایک کو جلد از جلد تازہ ترین ویکسین ملنی چاہیے۔ جبکہ یو ایس سینٹرز فار ڈیزیز کنٹرول اینڈ پریوینشن نے گزشتہ ہفتے کہا تھا کہ گزشتہ ہفتے 45 لاکھ امریکیوں نے تازہ ترین ویکسین حاصل کرلی ہے، یہ موسم خزاں کی ویکسینیشن پروگرام کے آغاز کے بعد سے سب سے بڑا ہفتہ وار اضافہ ہے۔ ویکسینیشن کرانے کی شرح میں یہ اضافہ اس سے قبل کے ہفتہ کے مقابلہ میں 40 فیصد اضافہ ہے۔

کورونا اور اس کی اقسام کی اصل ویکسین

واضح رہے امریکہ نے ستمبر میں اپ ڈیٹ شدہ کووِڈ ویکسین کی خوراک جاری کرنا شروع کی تھی جو اصل کرونا وائرس اور اس کی مختلف اقسام سے متعلق ہے۔

بائیڈن کے کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق جولائی میں ہوئی تھی جب وہ ہلکی علامات میں مبتلا تھے اور ان کے ٹیسٹ کا نتیجہ مثبت آیا تھا۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ بیکسلوڈ اینٹی وائرل دوا لینے والے کچھ فیصد لوگوں میں انفیکشن کے دوبارہ ہونے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔

بعد میں اگست میں بائیڈن کا دو مرتبہ کرونا ٹیسٹ منفی میں آیا تھا۔ انہوں نے دو ہفتے سے زیادہ وائٹ ہاؤس میں قرنطینہ بھی کیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں