سعودی عرب: سکیورٹیز میں غیرملکی سرمایہ کاری کے قوانین میں ترمیم کا مسودہ پیش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی کیپٹل مارکیٹ اتھارٹی کے بورڈ نے سیکیورٹیز میں غیر ملکی سرمایہ کاری کو ریگولیٹ کرنے والے قوانین میں ترامیم کا مسودہ شائع کر دیا۔ اس مسودے کے بارے میں عوامی مشاورت کیلئے 30 دن کی مدت دی گئی ہے۔ 9 جنوری 2023 کو مدت ختم ہونے کے بعد تجاویز کو زیر غور لایا جائے گا اور پھر حتمی مسودہ لایا جائے گا۔

اتھارٹی نے اتوار کو اپنے بیان میں کہا کہ اس منصوبے کے سب سے اہم عناصر میں غیر ملکی سرمایہ کار کی جانب سے اہلیت کی شرائط کو پورا کرنا اور اہلیت کیلئے درپیش تمام ضروریات کو فراہم کرنا شامل ہے۔ مزید اہلیت کی درخواست جمع کرانے کی ضروریات کو منسوخ کرنا، اہل قرار غیر ملکی سرمایہ کاروں کی تشخیص کا معاہدہ اور سرمایہ کاری اکاؤنٹس کی ہدایات کے مطابق سرمایہ کاری اکاؤنٹ کھولنے کی ضروریات سے مطمئن ہونا شامل ہے۔

اس میں زیر انتظام اثاثوں کے حجم کی ضرورت میں سے کچھ کیٹگریز کو مستثنیٰ بھی کیا گیا ہے۔ مرکزی مارکیٹ میں درج سیکیورٹیز میں غیر ملکی سرمایہ کاری کے لیے ایک نیا چینل بھی ضروریات میں شامل ہے۔ یہ سب غیر ملکی قدرتی اور قانونی افراد کو مرکزی مارکیٹ میں درج سکیورٹیز میں انویسٹمنٹ کی اجازت دے کر کیا جائے گا۔ یہ اجازت مالیاتی مارکیٹ کے اداروں کے زیر انتظام انویسٹمنٹ پورٹ فولیوز کی بنا پر دی جائے گی۔

ترمیمی مسودے میں سویپ معاہدوں کے ذریعے درج سیکیورٹیز میں غیر مقامی غیر ملکی سرمایہ کاری کے لیے شرائط تیار کرنا بھی شامل ہے، اس میں معاہدے کی مدت پر عائد شرط کی منسوخی بھی شامل ہے۔ سویپ معاہدے کو مکمل کرنے سے پہلے اتھارٹی کو مطلع کرنے کی ضرورت کو منسوخ کرنا اس کے علاوہ ہے۔

امید کی جاتی ہے کہ یہ ترامیم سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی، مالیاتی منڈی کی کشش اور کارکردگی کو بڑھانے، علاقائی اور بین الاقوامی سطح پر اس کی مسابقت کو بڑھانے اور مقامی معیشت کو سپورٹ کرنے، نئے غیر ملکی سرمائے کو راغب کرنے میں فائدہ مند ثابت ہوں گی۔ مارکیٹ کی لیکویڈیٹی کو بڑھانے میں بھی مدد ملے گی۔ ترامیم کا مقصد مارکیٹ کی کشش کو بڑھانا، عالمی سطح پر مارکیٹ کی پوزیشن کو مضبوط کرنا اور علم اور مہارت کو اداروں کی طرف منتقل کرنا ہے۔

یہ بات قابل غور ہے کہ عوامی مشاورت کے لیے سیکیورٹیز میں غیر ملکی سرمایہ کاری کو ریگولیٹ کرنے والے قوانین میں ترامیم کے مسودے کا مقصد سیکیورٹیز میں غیر ملکی سرمایہ کاری کو ریگولیٹ کرنے والی دفعات کو تیار کرنا اور سیکیورٹیز میں غیر ملکی سرمایہ کاری کو ریگولیٹری فریم ورکس تک رسائی کی سہولت فراہم کرنا ہے۔

اتھارٹی نے واضح کیا کہ متعلقہ افراد کی آرا اور ان کے مشاہدات کو حاصل کرنے کیلئے الیکٹرانک لنک کے ذریعے رائے دی جاسکتی ہے۔ منصوبے کے حتمی ورژن کی منظوری سے قبل تمام آرا اور مشاہدات کو زیر غور لایا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں