سوڈانی فوج اورسریع الحرکت فورسزمیں جھڑپیں؛ سعودی عرب اوریواے ای کامذاکرات پرزور

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے سوڈان میں فوج اور نیم فوجی سریع الحرکت فورسز(آرایس ایف) کے درمیان جھڑپوں کے بعدتنازع کے حل کے لیے مذاکرات کی ضرورت پرزوردیا ہے۔

سعودی عرب کی وزارت خارجہ نے ہفتے کے روز ایک بیان میں ہے کہ مملکت کو سوڈان میں فوج اور آر ایس ایف کے درمیان جھڑپوں پر گہری تشویش لاحق ہے۔

مملکت نے متحارب فریقوں سے ضبط وتحمل سے کام لینے پرزوردیا ہے اورلڑائی میں شریک فریقوں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ مسلح تنازعات کے بجائے بات چیت کا انتخاب کریں۔

دریں اثناء متحدہ عرب امارات نے بھی سوڈان میں کشیدگی میں کمی اورتحمل کا مظاہرہ کرنے اور موجودہ بحران کو مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کی ضرورت پرزوردیا ہے۔

عرب لیگ نے بھی سوڈان کی موجودہ صورت حال پر گہری تشویش کا اظہارکیا ہے اورفریقین سے کشیدگی میں کمی کا مطالبہ کیا ہے۔

قبل ازیں آج سعودی عرب کی فضائی کمپنی السعودیہ نے سوڈان کے لیے اپنی تمام پروازوں کو تاحکم ثانی معطل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔مصر کی قومی فضائی کمپنی نے بھی سوڈان کے دارالحکومت خرطوم سے آنے اوروہاں جانے والی تمام پروازیں 72 گھنٹے کے لیے معطل کرنے کااعلان کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں