مراکش زلزلہ

سعودی ولی عہد کا شاہِ مراکش کو فون؛زلزلے میں انسانی جانوں کے ضیاع پراظہارِتعزیت

سعودی حکام کو الم ناک سانحے کے اثرات کم کرنے کے لیے مراکش کوضروری ریلیف اورانسانی امداد مہیّا کرنے کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے مراکش کے شاہ محمد ششم سے ٹیلی فون پر بات چیت کی ہے اور ان سے مراکش میں حالیہ تباہ کن زلزلے میں انسانی جانوں کے ضیاع پر سعودی عرب کی جانب سے تعزیت کا اظہار کیا ہے۔

شہزادہ محمد بن سلمان نے ان سے گفتگو میں سعودی عرب کی جانب سے مراکش اور اس کے عوام کے ساتھ غیرمتزلزل یک جہتی کا اظہار کیا ہے۔انھوں نے متعلقہ سعودی حکام کو ہدایت کی ہے کہ وہ اس الم ناک سانحے کے اثرات کو کم کرنے کے لیے فوری طور پر ضروری ریلیف اورانسانی امداد مہیّا کریں۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق شہزادہ محمد بن سلمان نے دعا کی کہ اللہ تعالیٰ زلزلے میں کام آنے والے تمام مرحومین کی روحوں پر اپنی رحمتیں نازل فرمائے، غم زدہ خاندانوں کو صبرِجمیل عطا فرمائے اور زخمیوں کو جلد صحت یاب کرے۔

ایس پی اے نے اطلاع دی ہے کہ اس کے جواب میں شاہ محمد ششم نے سعودی عرب کے ہمدردانہ مؤقف اور مشکل کی اس گھڑی میں محبت وانس پر مبنی برادرانہ جذبات کے اظہار پر سعودی ولی عہد کا شکریہ ادا کیا۔

مراکش میں جمعہ کی شب ریختراسکیل پر 6.8 کی شدت کا زلزلہ آیا تھا اور اس کے جھٹکے کوہ اطلس کے پہاڑی سلسلے میں دور دراز علاقوں تک محسوس کیے گئے تھے۔زلزلے کا مرکزتاریخی مراکش شہر سے 72 کلومیٹر جنوب مغرب میں تھا۔

مراکش کی وزارت داخلہ کے مطابق زلزلے کے نتیجے میں سوموار کو ہلاکتوں کی تعداد بڑھ کر2862 ہوگئی ہے۔وزارت نے بتایا کہ مزید 2,562 افراد زخمی ہوئے ہیں۔امدادی کارکنان ہنوز زندہ بچ جانے والوں کے تلاش کے لیے کوشاں ہیں اور وہ متاثرہ علاقوں میں امدادی سرگرمیاں جاری رکھے ہوئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں