برطانوی شاہی خاندان کی ویب سائٹ سائبر حملے کا نشانہ

خاندان کی سرکاری ویب سائٹ کو اتوار کی صبح رابطے کے مسائل کا سامنا کرنا پڑا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایک شاہی ذریعہ نے اعلان کیا ہے کہ برطانوی شاہی خاندان کی سرکاری ویب سائٹ کو "سروس سے انکار" حملے کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ سرکاری ویب سائٹ ’’رائل ڈاٹ یوکے‘‘ جسے کنگ چارلس، ملکہ کمیلا اور ان کے خاندان سے متعلق معلومات کا ذریعہ سمجھا جاتا ہے نے یکم اکتوبر کی صبح 10 بجے سے تقریباً 90 منٹ تک کام کرنا چھوڑ دیا۔

ذریعہ نے وضاحت کی کہ ’’سروس سے انکار‘‘ حملے کا مطلب یہ تھا کہ سائٹ کو براؤزنگ کی بھاری درخواستوں کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ ویب گاہ اس قدر زیادہ درخواستوں سے نمٹنے کے قابل نہ تھی جس کی وجہ سے اس نے کام کرنا چھوڑ دیا۔

اگرچہ اس واقعے کو حملہ کے طور پر بیان کیا گیا تھا لیکن یہ سائبر اٹیک کے مترادف نہیں ہے۔ اس کا مطلب ہے کہ ذمہ دار فریق نے کامیابی کے ساتھ سائٹ تک رسائی حاصل کی اور اسے ہیک کرنے اور خطرے سے دوچار ہونے کا سبب بنا۔ تاہم اس میں نہ تو مواد اور نہ ہی شاہی سائٹ کے سسٹمز تک رسائی حاصل کی گئی۔ .

ویب سائٹ اب معمول کے مطابق کام کرنے پر واپس آ گئی ہے۔ ایسا لگتا ہے کہ یہ ویب سائٹ کے زائرین پر اضافی سکیورٹی چیک لاگو کر رہا ہے۔ یاد رہے یہ ویب سائٹ بادشاہ اور ملکہ کی سرگرمیوں کے ساتھ ساتھ شاہی رہائش گاہوں اور فنون لطیفہ سے متعلق تاریخی معلومات فراہم کرتی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ فی الحال یہ معلوم نہیں ہے کہ سائبر حملے کا ذمہ دار کون ہے۔

بعد ازاں روسی ہیکر گروپ ’’Killnet‘‘ نے حملے کی ذمہ داری قبول کرلی اور ٹیلی گرام ایپلی کیشن پر اپنے چینل پر اس کے بارے میں معلومات شائع کیں۔ تاہم ابھی تک تصدیق نہیں ہوسکی ہے کہ آیا یہ حملہ اسی گروپ نے کیا تھا یا نہیں۔

واضح رہے گزشتہ اگست میں برطانوی انٹیلی جنس سروسز نے 2021 میں الیکٹورل کمیشن کی ویب سائٹ پر ہونے والے سائبر حملے کو روسیوں سے منسلک کرنے والے شواہد کا پتہ چلایا تھا۔ اس حملے نے 40 ملین سے زیادہ برطانوی ووٹرز کا ڈیٹا بے نقاب کر دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں