سب سے بڑی کنٹینر شپنگ کمپنی نے بحیرہ احمر میں اپنے بحری جہازوں کی آمدورفت معطل کردی

فیصلہ یمن سے حوثی باغیوں کے تجارتی بحری جہازوں پر حملوں کے تناظر میں کیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سوئٹزر لینڈ میں قائم بحیرہ روم کی شپنگ کمپنی (MSC) نے اعلان کیا ہے کہ وہ اپنے ایک بحری جہاز پر حملے کے بعد نہر سویز کا استعمال بند کر رہی ہے۔ گزشتہ چند ہفتوں میں ایرانی حمایت یافتہ یمنی حوثی گروپ نے بحیرہ احمر میں بحری جہازوں پر حملہ کیا ہے۔ یہ ایک اہم راستہ ہے جو مشرق اور مغرب کے درمیان تجارت خاص طور پر تیل کو سوئز کینال سے گزرنے کی اجازت دیتا ہے۔ اس راستے کی وجہ سے وقت اور سفر کے اخراجات بچ جاتے ہیں۔

رائٹرز کے مطابق حوثی گروپ نے اعلان کیا ہے کہ لائبیریا کا جھنڈا لہرانے والے جہاز ’’ ایم ایس سی پلاٹینم تھری‘‘ پر جمعہ کو بحیرہ احمر کے جنوبی سرے پر واقع آبنائے باب المندب میں ایک ڈرون کے ذریعے حملہ کیا گیا تھا۔

دنیا کی سب سے بڑی کنٹینر شپنگ کمپنی ’’ایم ایس سی‘‘ نے کہا کہ کسی جانی نقصان کی کوئی اطلاع نہیں ہے لیکن بحری جہاز کو آگ لگنے سے کچھ نقصان پہنچا ہے اور بحری جہاز نے سروس معطل کردی ہے۔

امریکی فوج کا کہنا تھا کہ ایک میزائل نے لائبیریا کا جھنڈا لہرانے والے دوسرے بحری جہاز جسرا کو نشانہ بنایا جس سے آگ بھی لگ گئی۔

سات اکتوبر سے حماس اور اسرائیل کے درمیان جاری جنگ کے دوران حوثیوں نے حالیہ ہفتوں میں بحری جہازوں پر اپنے حملے تیز کر دیے ہیں۔ حوثیوں نے اسرائیل کی جانب ڈرون اور میزائل بھی داغے ہیں۔

یمن کے زیادہ تر حصے پر قابض حوثی باغیوں نے اس وقت تک اپنے حملے جاری رکھنے کا عہد کیا جب تک کہ اسرائیل غزہ میں اپنی جارحیت بند نہیں کر دیتا۔ تاہم انہوں نے جمعہ کو کہا کہ وہ صرف اسرائیلی بندرگاہوں کی طرف جانے والے جہازوں کو نشانہ بناتے ہیں۔

باب المندب دنیا کے اہم ترین راستوں میں سے ایک ہے جو بنیادی سامان کی ترسیل کے لیے سمندری راستہ ہے۔ خاص طور پر خام تیل اور ایندھن خلیج سے بحیرہ روم تک نہر سویز یا قریبی SUMED پائپ لائن کے ذریعے منتقل کیا جاتا ہے۔ برطانیہ نے ہفتے کے روز کہا کہ اس کے ایک جنگی بحری جہاز نے ایک مشتبہ حملہ آور ڈرون کو مار گرایا جو خطے میں تجارتی بحری جہازوں کو نشانہ بنا رہا تھا۔

حملوں میں اضافے کے جواب میں، ڈنمارک کی کمپنی اے پی مولر- مارسک نے جمعہ کو باب المندب کے ذریعے تمام کنٹینرز کی ترسیل کو اگلے نوٹس تک بند کرنے کا اعلان کیا۔ جرمن شپنگ کمپنی ہاپاگ لائیڈ نے کہا کہ وہ بھی ایسا ہی کر سکتی ہے۔۔ چند گھنٹے قبل اس کے ایک بحری جہاز کو نشانہ بنانے کی اطلاعات سامنے آئی تھیں۔ فرانسیسی شپنگ گروپ CMA CGM نے بھی ہفتہ کو بحیرہ احمر سے تمام کنٹینرز کی ترسیل کے بند ہونے کا اعلان کیا۔

ایم ایس سی نے کہا ہے کہ وہ افریقہ کے جنوبی سرے پر کیپ آف گڈ ہوپ کے ارد گرد کچھ بحری جہازوں کو دوبارہ روٹ کرے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں