مشرق وسطیٰ : بحری جہازوں پرحوثی حملوں بارے امریکہ نے ایران کو نجی پیغام بھیج دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

امریکی صدر جوبائیڈن نے کہا ہے کہ امریکہ نے ایران کو ایک نجی انداز کا پیغام بھیجا ہے۔ جوبائیڈن کے مطابق امریکہ نے یہ پیغام بحیرہ احمر میں بحری جہازوں پر ایرانی حمایت یافتہ حوثیوں کے حملوں کے سلسلے میں دیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی امریکی صدر نے رپورٹرز سے بات کرتے ہوئے کہا ' ہم پر اعتماد ہیں کہ ہماری تیاری مکمل ہے۔'

جوبائیڈن کیمپ ڈیوڈ میں چھٹیاں منانے کے لیے روانگی سے پہلے رپورٹرز سے بات کر رہے تھے۔ انہوں نے اپنی کیمپ ڈیوڈ روانگی یمن پر امریکی حملوں کے اگلے روز کے لیے شیڈول کر رکھی تھی۔

واضح رہے امریکہ اور اس کے اہم ترین مغربی اتحادی برطانیہ نے جمعہ کی رات یمن کے کئی شہروں میں متعدد حوثی مراکز پر حملے کیے ہیں۔ جس سے خطے میں کشیدگی میں مزید اضافہ ہو گیا ہے۔

امریکہ اور برطانیہ کے ان راتوں رات کیے گئے حملوں کے بعد ایرانی حمایت یافتہ حوثیوں نے بھی ان حملوں کا مضبوط اور موثر جواب دینے کا اعلان کیا ہے۔ جبکہ امریکہ نے تجارتی جہازوں کو بہر طور تحفظ دینے کا عزم کیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق امریکہ و برطانیہ نے متعدد حوثی مراکز کو نشانہ بنانے سمیت ایک حوثی ریڈار سائٹ کو بھی نشانہ بنایا ہے۔ اس سلسلے میں تباہی کے مناظر دکھانے کے لیے سیٹلائٹ سے بنائی گئی تصاویر بھی جاری کی گئی ہیں۔

وائٹ ہاؤس کے ترجمان جان کربی نے ان حملوں کے بارے میں بتایا ہے کہ یمن میں حملوں سے حوثیوں کی میزائلوں کے ذخیروں اور لانچنگ پیڈز کو بھی نشانہ بنایا گیا ہے۔ جن کی وجہ سے جہاز رانی کو خطرات لاحق رہے ہیں'

جان کربی نے مزید کہا ' واشنگٹن کو یمن کے ساتھ جنگ میں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔ ' دوسری جانب صدر جوبائیڈن نے رپورٹرز کے سوال پر کہا ' مجھے لگتا ہے کہ حوثی دہشت گرد ہیں۔ '

واضح رہے امریکی دفتر خارجہ نے 2021 میں حوثیوں کا نام دہشت گردوں کی فہرست سے نکال دیا تھا۔ لیکن اب جوبائیڈن نے ان کے بارے میں امریکہ کی پرانی سوچ ظاہر کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں