کسان نے اپنی زمین میں داخل ہونے والے گدھے کی ٹانگیں کاٹ دیں، عوام میں شدید غم وغصہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سوشل میڈیا پر ایک عجیب و غریب واقعے نے مراکش کے باشندوں کو ہلا کر رکھ دیا۔ یہ واقعہ ایک کسان کی جانب سے ایک گدھے کی اس کی زمین میں داخل ہونے پر اس کی ٹانگیں کاٹنے کا ہے۔

گدھے کی ٹانگیں کاٹنے پر کسان کے خلاف عوام شدید مذمت اور غم و غصے کی لہر دوڑ گئی ہے۔

یہ واقعہ ملک کے مشرق میں واقع شہر زاکورہ میں پیش آیا، جس میں ایک فارم کے مالک نے اپنے فارم میں گھس کر وہاں موجود سبزیاں اور فصلیں کھانے والے گدھے کی تیز دھار آلے سے ٹانگیں کاٹ دیں۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر گردش کرنے والی تصاویر میں گدھے کو اس کے پچھلے اعضاء میں شدید زخمی دکھایا گیا۔ اس کی ٹانگوں سے خون بہہ رہا ہے اور وہ شدید تکلیف میں ہے جس کی وجہ سے وہ چلنے سے قاصر ہے۔اس واقعے نے عوامی حلقوں میں شدید غم وغصے کی لہر دوڑا دی اور شہریوں نے گدھے کی ٹانگیں کاٹنے پر کسان کے خلاف قانونی کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

ایک بلاگر نے لکھا کہ " میرے پاس اس واقعے کو بیان کرنے کے لیے الفاظ نہیں۔ ایک ایسے جانور کے خلاف کیے گئے وحشیانہ فعل پر کسان کےخلاف مقدمہ چلایا جانا چاہیے جس کا واحد گناہ بھوک کا احساس ہے"۔

دوسری جانب پولیس نے کہا ہے کہ اس نے گدھے کی ٹانگیں کاٹنے والے کسان کو گرفتار کیا گیا جسے بعد میں 2,000 درہم کی مالی ضمانت پر رہا کیا کردیا گیا۔ تاہم اس کے خلاف عدالت میں کیس چل رہا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ مراکشی پینل کوڈ جانوروں کے قتل یا تشدد کی سزا دیتا ہے۔ آرٹیکل 601 میں کہا گیا ہے کہ جانوروں کونقصان پہنچانے اور انہیں تکلیف دینے والے کو پانچ سال قید اور دو سو سے پانچ سو درہم جرمانے کی سزا دی جائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں