.

حسن نصر اللہ کا شامی اپوزیشن ک خلاف 'کامیابی' کا وعدہ

"حزب اللہ کے ہزاروں جنگجو شامی انقلابیوں کے خلاف لڑنے کو تیار ہیں"

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنان کی شیعہ تنظیم حزب اللہ کے جنرل سیکرٹری حسن نصراللہ نے شامی اپوزیشن کے خلاف لڑائی میں 'کامیابی' کا عہد کرتے ہوئے کہا کہ ان کی تنظیم تنازع میں اپنے کردار کے بارے میں پوری طرح یکسو ہے اور اس کے نتیجے میں آنے والی قربانیوں اور نتائج کو تسلیم کرتی ہے۔

ان خیالات کا اظہار حسن نصر اللہ نے جنوبی لبنان سے اسرائیلی فوج کے انخلا کی 13 ویں سالگرہ 'یوم آزادی' کے موقع پر اپنے نشری خطاب میں کیا۔ "میں باعزت عوام، مجاہدین اور ابطال کو یاد دلانا چاہتا ہوں ک میں نے ہمیشہ آپ سے کامیابی کا وعدہ کیا ہے۔ اب میں شام میں نئی 'کامیابی' کا وعدہ کرتا ہوں۔

حزب اللہ نے ہفتے کے روز پہلی مرتبہ اعتراف کیا کہ ان کی تنظیم کے جنگجو شام میں بشار الاسد نواز فوج کے شانہ بشانہ لڑ رہے ہیں۔ ان کی لڑائی شام کے ان انتہا پسندوں کے خلاف ہے کہ جو لبنان کے لئے خطرہ بنے ہوئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ یہ میری بھی پہلی خواہش ہے کیونکہ حزب اللہ کے جنگجو شام کے وسطی شہر القصیر کی لڑائی میں بہت زیادہ جت چکے ہیں۔ حسن نصراللہ نے کہا کہ ساری دنیا سے انتہا پسندوں کو شامی حکومت کے خلاف لڑنے کے لئے بھیجا جا رہا ہے۔ دوسی طرف حزب اللہ کے مٹھی بھر افراد کی شام میں موجودگی کا واویلہ کیا جا رہا ہے۔