.

ہزاروں یہود کی جھڑپوں کے بعد دیوار غربی میں عبادت

مقبوضہ القدس میں پولیس کے ساتھ جھڑپوں کے الزام میں 6 فلسطینی گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مقبوضہ بیت المقدس میں ہزاروں یہودی مسجد الاقصیٰ سے متصل واقع دیوار غربی میں اپنی عبادت کے لیے پہنچے ہیں لیکن انھوں اپنی یہ مذہبی رسم بھی تشدد کے بغیر نہیں اداکی اور ان کی فلسطینیوں کے ساتھ جھڑپیں ہوئی ہیں۔

اسرائیلی پولیس نے یہود کی عبادت کے لیے آمد سے قبل مسجد الاقصیٰ میں غیر مسلموں کا داخلہ بند کردیا تھا۔ صہیونی پولیس کے ترجمان میکی روزنفیلڈ کا کہنا ہے کہ یہ اقدام جھڑپوں سے بچنے کے لیے کیا گیا تھا اور جمعرات کو یہودیوں کی مسجد اقصیٰ کے عقب میں واقع دیوار غربی میں عبادت کے دوران کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا۔

البتہ اس سے قبل یہودیوں کو مسجد الاقصیٰ کے احاطے میں یہودیوں کو داخل ہونے کی اجازت دینے کے ردعمل میں فلسطینیوں اور پولیس کے درمیان گذشتہ اتوار اور بدھ کو جھڑپیں ہوئی تھیں۔روزنفیلڈ کا کہنا ہے کہ چھے فلسطینی نوجوانوں کو بدھ کو پولیس کے ساتھ جھڑپوں کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔

یہودی حضرت موسیٰ علیہ السلام کے دور میں فراعنہ مصر سے نجات اور وہاں سے سرزمین فلسطین کی جانب خروج کی یاد میں عيد الفصح یا عيد تذكار کا سالانہ تیوہار منا رہے ہیں۔اس سات روزہ عید میلے کے دوران یہودی الحرم الشریف (مسجد الاقصیٰ) میں آمد کو اہم خیال کرتے ہیں لیکن انھیں وہاں عبادت کی اجازت نہیں ہے۔البتہ وہ دیوار گریہ یا دیوار غربی کے ساتھ ہی لپٹ لپٹا کر اپنی مذہبی رسوم بجا لاتے ہیں۔

یہود ایسے وقت میں اپنی یہ عید نجات منا رہے ہیں جب عیسائی بھی آیندہ اتوار کو اپنا مذہبی تیوہار ایسٹر منانے کی تیاریاں کررہے ہیں اور وہ بھی اس دن الحرم الشریف سے متصل اپنے لیے مقدس جگہ پر عبادت کے لیے آئیں گے۔اسرائیلی حکومت نے مغربی کنارے سے تعلق رکھنے والے سترہ ہزار اور غزہ کی پٹی سے تعلق رکھنے والے پانچ سو عیسائیوں کو مقبوضہ القدس میں داخلے کے لیے اجازت نامے جاری کیے ہیں۔

واضح رہے کہ گذشتہ ہفتے اسرائیلی پولیس کی معیت اور تحفظ میں قریباً اسّی انتہا پسند یہودی آبادکاروں نے ایک کٹڑ ربی کی قیادت میں مسجد اقصیٰ پر دھاوا بول دیا تھا اور اس کی بے حرمتی کی تھی۔اس کے بعد گذشتہ جمعہ کو مسلمانوں کو مسجد اقصیٰ میں نماز کے لیے داخل ہونے سے روک دیا گیا تھا۔فلسطینیوں نے اس اقدام کے خلاف احتجاج کیا تھا اور ان کی اتوار اور بدھ کو اسرائیلی پولیس اور یہودیوں کے ساتھ جھڑپیں ہوئی تھیں۔