غزہ پر اسرائیلی حملہ؛ اسلامی جہاد کا اہم رہنما شہید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

رمضان المبارک کے جمعہ الوداع کے موقع پر اسرائیلی فوج کے ایک حملے میں اسلامی جہاد کے شعبہ اطلاعات ونشریات کے سربراہ اور تنطیم کے عسکری ونگ سرایا القدس فوجی کونسل کے سینیئر رکن صلاح ابو حسنین شہید کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق اسرائیلی فوج کے اہدافی حملے میں ابو الحسینین کے دو بیٹوں عبدالعزیز اور عبدالھادی نے بھی جام شہادت نوش کیا جبکہ ان کے اہل خانہ کے کئی افراد شدید زخمی بتائے جاتے ہیں۔

سرایا القدس بریگیڈ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ صہیونی فوج نے جمعہ کو علی الصباح غزہ میں صلاح ابو الحسنین کے گھر پر اس وقت متعدد میزائل داغے جب وہ کچھ ہی دیر قبل اپنے گھر میں داخل ہوئے تھے۔ زخمی ہونے والوں میں شہید کے بچے اور اہلیہ بھی شامل ہیں، جنہیں فوری طور اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

درایں اثنا عبرانی اخبار 'یدیعوت احرونوت' نے اپنی انگریزی ویب سائٹ میں شائع ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ صلاح ابو الحسنین پر قاتلانہ حملہ فوج اور داخلی سلامتی کے ادارے'شاباک' کے مشترکہ تعاون سے کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں