.

شامی اپوزیشن گروپوں میں ہزاروں روسی جنگجو موجود !

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

روسی وزیر اعظیم دمتری میدویف نے اس امر کی تصدیق کی ہے روس اور سابق سوویت ریاستوں سے تعلق رکھنے والے ہزاروں جنگجو اس وقت شامی مسلح اپوزیشن گروپوں کی صفوں میں لڑ رہے ہیں۔

ساتھ ہی روسی وزیر اعظم نے اس بات سے خبردار کیا کہ مذکورہ عناصر کے وطن لوٹنے کے بعد ملک میں حملے کرنے کا قوی امکان ہے۔

سرکاری اندازوں کے مطابق گزشتہ برس کے اختتام تک تقریبا 3 ہزار روسی شہری مشرق وسطی میں لڑائی میں شمولیت کے لیے اپنے ملک سے کوچ کر چکے ہیں۔