.

اسرائیل آگ سے کھیل رہا ہے: عرب لیگ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عرب لیگ کے سکریٹری جنرل احمد ابو الغیط کا کہنا ہے کہ "بیت المقدس سُرخ لائن ہے"۔ اتوار کے روز جاری بیان میں انہوں نے الزام عائد کیا کہ اسرائیل " آگ سے کھیل رہا ہے" اور وہ اپنی پالیسیوں اور اقدامات کے ذریعے خطے کو"انتہائی خطرناک کجی" میں جھونک رہا ہے۔ اوب الغیط کے مطابق اسرائیل کی پالیسیاں اور اقدامات نہ صرف فلسطینیوں کو نشانہ بنا رہے ہیں بلکہ یقینی طور پر پوری دنیا میں ہر عرب اور مسلمان کے جذبات کو مشتعل کر رہے ہیں۔

عرب لیگ کے سکریٹری جنرل کے بیان میں کہا گیا ہے کہ "بیت المقدس سرخ لائن ہے لہذا عرب اور مسلمان اس کے ضرر کو ہر گز قبول نہیں کریں گے"۔

ابو الغیط کے مطابق اسرائیل مسجد اقصی کے حرم قدسی میں داخلے کے لیے اپنے سکیورٹی اقدامات مسلط کر کے عرب اور اسلامی دنیا کے ساتھ بہت بڑا اور سنگین بحران بھڑکانے کی کوشش کر رہا ہے۔

دوسری جانب فلسطینی اراضی میں مقبوضہ بیت المقدس اور مسجد اقصیٰ میں فلسطینیوں اور اسرائیلی فوج کے درمیان پائی جانے والی کشیدگی کی روک تھام پر غور کے لیے عالمی سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس کل پیر کے روز طلب کیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق اقوام متحدہ کے سفارت کاروں نے ہفتے کے روز بتایا کہ سلامتی کونسل کا اجلاس سویڈن، فرانس اور مصر کے مطالبے پر طلب کیا گیا ہے۔ اجلاس میں مقبوضہ بیت المقدس میں جاری کشیدگی اور مسجد اقصیٰ میں فلسطینی نمازیوں پر اسرائیلی فوج کی پابندیوں پر غور کیا جائے گا۔

ادھر مشرق وسطی سے متعلق چار فریقی بین الاقوامی کمیٹی (امریکا ، روس ، یورپی یونین اور اقوام متحدہ) نے مقبوضہ مشرقی بیت المقدس کی صورت حال سے متعلقہ تمام فریقوں پر زور دیا ہے کہ وہ اپنے جذبات کو انتہائی حد تک قابو میں رکھیں۔ ساتھ ہی کمیٹی نے اسرائیل سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ بیت المقدس کی صورت حال کو دوبارہ سے اپنی پرانی وضع پر لے کر آئے۔