.

شامی ڈیموکریٹک فورس کا ’’الرقہ‘‘ کے پچاس فیصد حصے پر کنٹرول

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی اتحاد کی حمایت یافتہ شامی ڈیموکریٹک فورس نے شام میں داعش کے مبینہ صدر مقام ’’الرقہ‘‘ کا کنڑول حاصل کر لیا ہے۔ شام میں انسانی حقوق کی صورتحال پر نظر رکھنے والی آبزرویٹری کے مطابق یہ کارروائی صرف دو مہینوں کی لڑائی کے بعد حاصل کی گئی ہے۔

آبزرویٹری کے ڈائریکٹر رامی عبدالرحمن نے بتایا کہ داعش کی جانب سے شدید مزاحمت کے باوجود شامی ڈیموکریٹک فورس اس وقت الرقہ شہر کے پچاس فیصد علاقے پر قابض ہے۔

شامی ڈیموکریٹک فورس الرقہ میں 6 جون کو داخل ہوئیں جبکہ اس سے پہلے انتہا پسند تنظیموں نے شہر کے اردگرد بے گناہ شہریوں کے خون سے خوب ہولی کھیلی تھی۔

شامی ڈیموکریٹک فورس کے زمینی حملے کو شام اور عراق میں داعش کے خلاف برسرپیکار امریکی اتحادی طیاروں کا مکمل ائر کور بھی حاصل ہے۔ نیز امریکی اسپیشل فوج کے مشیران اور ان کے ہمراہ لایا جانے والا اسلحہ بھی داعش کے خلاف آپریشن میں بھرپور استعمال ہو رہا ہے۔