.

گذشتہ ہجری سال میں سب سے زیادہ عمرہ زائرین پاکستان سے آئے

ویزے کی مدت ختم ہونے کے باوجود وطن نہ لوٹنے والوں میں بھی پاکستانی اوّل رہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

گذشتہ ہجری سال 1438 کے دوران میں عمرے کے ویزے پر سعودی عرب آنے والے پاکستانیوں کی بڑی تعداد ایسی ہے جو ویزے کی مدت ختم ہونے کے باوجود ملک واپس نہیں گئی اور اس وجہ سے اب متعدد مسائل پیدا ہو رہے ہیں۔

تفصیل کے مطابق گذشتہ ہجری سال کے دوران 14 لاکھ 53 ہزار 440 میں سے 6905 معتمرین اپنے ملکوں کو نہیں لوٹے۔ غیر قانونی طور پر مملکت میں چھپ جانے یا رک جانے والے ان افراد میں سب سے زیادہ تعداد پاکستانیوں کی بتائی جاتی ہے۔

عمرے پر آ کر سعودی عرب میں غیر قانونی قیام کرنے والوں میں نائیجیرین شہریوں کا نمبر دوسرا (1629) اور مصر کا نمبر تیسرا (1081) ہے۔ انڈونیشیا اور سوڈان کے عمرہ زائرین بالترتیب چوتھے اور پانچویں نمبر پر رہے ہیں۔ ان ملکوں سے تعلق رکھنے والے 592 شہری اس وقت غیر قانونی طور پر سعودی عرب میں مقیم ہیں۔

گذشتہ ہجری سال کے دوران میں زیادہ تعداد میں عمرہ زائرین کو سعودی عرب بھیجنے والے 10 ممالک میں بھی پاکستان پہلے نمبر پر رہا ہے۔ دوسرا نمبر انڈونیشیا، تیسرا نمبر مصر اور چوتھا نمبر ہندوستان کا رہا ہے۔ نیز ترکی عمرہ زائرین بھیجنے والے ممالک میں پانچویں نمبر پر ہے۔