.

حجّہ اور صنعاء کے بیچ حوثیوں کی سپلائی لائن پر اتحادی طیاروں کے حملے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے عرب عسکری اتحاد نے مغربی ساحل کے محاذ پر بڑے پیمانے پر عسکری کُمک پہنچائی ہے۔ اس اقدام کا مقصد الحدیدہ شہر اور اس کی تزویراتی بندرگاہ کی جانب رینگنے والی یمنی فوج اور عوامی مزاحمت کاروں کو سپورٹ فراہم کرنا ہے۔ العربیہ نیوز چینل کے نمائندے کے مطابق اتحادی طیاروں نے حجہ اور صنعاء کے درمیان باغی ملیشیا کی سپلائی لائنوں پر حملے کیے ہیں۔

عسکری ذرائع کے مطابق تھرڈ اور فورتھ بریگیڈ کو مغربی ساحل کی جانب بڑھایا گیا ہے جہاں التحیتا اور حیس کے علاقوں میں اتحادی طیاروں کی معاونت سے شدید جھڑپیں جاری ہیں۔

ادھر یمنی فوج نے تعز کے مغرب میں مقبنہ گورنری میں شدید جھڑپوں کے بعد الخزان اور المزاردہ کے علاقوں پر اپنا کنٹرول مستحکم کر لیا ہے۔ جھڑپوں میں متعدد باغی ہلاک اور زخمی ہو گئے۔

دوسری جانب مغربی ساحل کے محاذ پر اتحادی طیاروں نے الجراحی گورنری میں 15 سے زیادہ فضائی حملے کیے جن میں اسلحہ ڈپوؤں کے علاوہ الحدیدہ اور اِب سے آنے والی کمک کو بھی نشانہ بنایا گیا۔

عسکری ذرائع کے مطابق الحدیدہ اور تعز شہر کے درمیان پھیلے راستے پر حیس گورنری کے شمال میں حوثیوں کے عسکری قافلے کو نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں درجنوں حوثی ہلاک اور زخمی ہو گئے۔

ادھر تعز میں اتحادی لڑاکا طیاروں اور یمنی فوج کے توپ خانوں نے مقبنہ گورنری میں باغی ملیشیا کے گروپوں اور کمک کو شدید بم باری اور گولہ باری کا نشانہ بنایا۔ اس کے نتیجے میں کئی حوثی جنگجو ہلاک اور زخمی ہونے کے علاوہ ہتھیار اور لڑائی کا ساز و سامان تباہ ہو گیا۔