.

تیونسی خاتون فن کار رمضان سے کیوں خوف زدہ رہتی ہیں ؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

تیونس کی خاتون فن کار (گلوکار) لطیفہ العرفاوی نے انکشاف کیا ہے کہ شاعر محمد عبدالوہاب نے ان کو شادی نہ کرنے کی نصیحت کرتے ہوئے کہا تھا کہ "فن کبھی کسی شریک کو قبول نہیں کرتا"۔

مصری چینل "القاہرہ والناس" پر نشر ہونے والے پروگرام "شيخ الحارة" میں گفتگو کرتے ہوئے لطیفہ کا کہنا تھا کہ ان کی شادی نہ ہونے میں مقدّر کا ہاتھ رہا۔ اگرچہ وہ ایک شخص کے ساتھ پانچ برس تک منگنی کے تعلق میں منسلک رہیں۔

اپنے والد کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے اشک بار آنکھوں کے ساتھ بتایا کہ "میری عمر 13 برس تھی جب وہ کام کے دوران فوت ہو گئے۔ ان کی وفات رمضان میں ہوئی تھی اس لیے مجھے رمضان سے خوف آتا ہے۔ بہرکیف میں ان کے لیے دعا کرتی ہوں۔ میرے والد مجھ سے بے حد محبت کرتے تھے"۔

لطیفہ نے بتایا کہ ان کے والد کی وفات کی خبر ملی تو وہ اپنی ایک ساتھی کے ساتھ کھیل رہی تھیں۔ انہوں نے بتایا کہ جس سال ان کے والد کی وفات ہوئی اس برس وہ اسکول کے امتحان میں فیل ہو گئیں اور یہ زندگی میں پہلا اور آخری موقع تھا جب وہ کسی امتحان میں فیل ہوئیں۔

تیونس کی خاتون گلوکار بے بتایا کہ گلوکاری کی دنیا میں وہ دو بڑی شخصیات سے متاثر ہوئیں اور ان دونوں سے بہت کچھ سیکھا۔ یہ دو خاتون گلوکار فیروز اور شادیہ ہیں۔

لطیفہ نے باور کرایا کہ قومی دن کے موقع پر وہ اپنے وطن کے لیے بنا کسی معاوضے کے گاتی ہیں۔ یہاں تک کہ ایک مرتبہ انہوں نے اپنے ساتھ موجود میوزیکل بینڈ کو معاوضے کی پوری ادائیگی اپنی جانب سے کی۔