.

عراق:بیلٹ باکسز نذر آتش ، اسپیکر کا دوبارہ پارلیمانی انتخابات کرانے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراقی پارلیمان کے سبکدوش ہونے والے اسپیکر سلیم الجبوری نے ملک میں دوبارہ پارلیمان انتخابات کے انعقاد کا مطالبہ کردیا ہے۔

انھوں نے یہ مطالبہ اتوار کو دارالحکومت بغداد میں بیلٹ باکسز کے ایک گودام میں آتشزدگی کے واقعے کے بعد کیا ہے۔اس گودام میں رکھے گئے بیلٹ باکسز میں موجود ووٹ پرچیوں کو دوبارہ گنتی ہونا تھی مگر وہ اس سے پہلے ہی نذر آتش کردیے گئے ہیں یا ہوگئے ہیں۔

سلیم الجبوری نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’الرصافہ میں ایک گودام میں پڑے بیلٹ باکسز کو جلا یا جانا ایک جرم ہے، یہ کارروائی جان بوجھ کر کی گئی ہے۔اس جرم کا باقاعدہ طے شدہ منصوبے سے ارتکاب کیا گیا ہے۔اس کا مقصد عام انتخابات میں فراڈ اور ووٹوں میں ہیر پھیر کی وار دات کو چھپانا تھا تاکہ عراقی عوام کو دھوکا دیا جاسکے اور ان کے انتخاب اور منشا کو تبدیل کیا جاسکے‘‘۔

انھوں نے کہا کہ ’’ ہم انتخابات کے دوبارہ انعقا د کا مطالبہ کرتے ہیں‘‘۔واضح رہے کہ سلیم الجبوری 12 مئی کو منعقدہ پارلیمانی انتخابات میں اپنی نشست ہار گئے تھے۔انھوں نے گودام میں آتش زدگی کے واقعے کے ذمے داروں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کا مطالبہ کیا ہے۔

عراقی وزارت داخلہ نے گودام میں آتش زدگی کے اس واقعے کی تصدیق کی ہے لیکن اس کے بارے میں کوئی وضاحتی بیان جاری نہیں کیا کہ آیا یہ آگ خود لگی تھی یا یہ کسی مجرمانہ کارروائی کا نتیجہ ہے لیکن یہ واقعہ ایسے وقت میں پیش آیا ہے جب عام انتخابات کے نتائج پر ملک میں پہلے ہی کشیدگی پائی جارہی ہے۔

عراق کی پارلیمان نے چھے جون کو ایک قرارداد کے ذریعے پارلیمانی انتخابات میں ڈالے گئے ووٹوں کی دوبارہ ہاتھوں سے جزوی گنتی کی منظوری دی تھی اور الیکٹورل کمیشن کو منجمد کردیا تھا۔پارلیمان نے گنتی کے عمل میں بڑے پیمانے پر بے ضابطگیوں کی شکایات کے بعد ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا حکم دیاتھا۔ الیکٹورل کمیشن نےاس گودام میں بیلٹ باکسز رکھوائے تھے مگر ووٹوں کی ہاتھوں سے گنتی سے پہلے ہی گودام کو آگ لگ گئی ہے یا لگا دی گئی ہے۔