.

یمن میں امن کا راستہ بدستور مشکلات سے بھرپور ہے: قرقاش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کے وزیر مملکت برائے خارجہ امور ڈاکٹر انور قرقاش نے کہا ہے کہ یمن میں دیر پا امن کے قیام کا راستہ اب بھی کئی مشکلات سے بھرپور ہے۔

انہوں نے کہا کہ یمن میں آئینی سیاسی حکومت کی عمل داری کی بحالی اور سیاسی عمل کے حوالے سے اقوام متحدہ کا کردار قابل تحسین ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق جمعہ کے روز "انگریزی" زبان میں ٹوئٹر پر پوسٹ کردہ ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ یمن میں‌ امن کے قیام کے لیے ہمارے سامنے اب بھی مشکلات ہیں مگر یہ اس باب میں اہم پیش رفت ہوئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ یمن میں دیر پا امن کے قیام کے لیے اقوام متحدہ کا سرگرم رہنا ضروری ہے۔ اماراتی وزیر مملکت نے کہا کہ یمن میں قیام امن سلامتی کونسل کی قرار داد 2216 کی روشنی میں ہونی چائیں۔

اماراتی وزیر نے مزید کہا کہ یمن میں امن وامان کی بحالی کے لیے سویڈن کی میزبانی میں ہونے والے مذاکرات اہم پیش رفت ہے اور یہ یمن کے مستحکم مستقبل کے لیے مضبوط بنیاد بن سکتے ہیں۔

انور قرقاش نے کہا کہ متحدہ عرب امارات یمن میں سیاسی عمل، انسانی امداد اور جنگ سے تباہ حال علاقوں کی تعمیر نو جاری رکھے گا۔
انہوں‌ نے کہا کہ یمن میں فوجی کارروائی نے حوثی ملیشیا کو مذاکرات اور حکومتی نمائندوں سے بات چیت پر مجبور ہونا پڑا ہے۔