یمن: حوثیوں نے جامع مسجد الکبیر کے کتب خانے کو آگ لگا دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

یمن میں باغی حوثی ملیشیا کی جانب سے ملک کی تاریخی مساجد اور ان کے کتب خانوں کے خلاف کارستانیوں کا سلسلہ جاری ہے۔ اس حوالے سے تازہ ترین مجرمانہ کارروائی میں حوثیوں نے صنعاء صوبے کے ضلع بنی بہلول میں واقع جامع مسجد الکبیر کے کتب خانے کو آگ لگا دی۔

یہ کتب خانہ خانہ نادر اور قدیم کتابوں اور تحریری مواد پر مشتمل ہے۔

مقامی ذرائع کے مطابق حوثی ملیشیا کے عناصر نے فرقہ وارانہ وجوہات کی بنا پر یہ کارروائی کی۔ منگل کی شب حوثی عناصر نے مسجد میں دراندازی کے بعد کتب خانے پہنچ کر وہاں توڑ پھوڑ کی اور کتب خانے کی کتابیں اپنے ساتھ لے کر چلے گئے۔

ذرائع کے مطابق کتب خانے میں موجود کتابوں کو مقامی لوگوں کے عطیات کی مدد سے گئی برسوں کے دوران کتابوں کی مختلف نمائشوں سے خریدا گیا تھا۔ اس کے علاوہ بعض افراد نے اپنی جانب سے بھی کتابیں عطیہ کی تھیں۔

کتب خانے میں کئی مشہور اور ضخیم کتابیں بھی موجود ہیں۔ ان میں امام شوکانی کی السيل الجرار المتدفق على حدائق الأزهار، امام محمد بن اسماعيل الصنعانی کی سبل السلام، امام طبری کی 10 جلدوں سے زیادہ پر مشتمل تفسیر، تاریخِ دمشق اور بہت سی قیمتی اور تاریخی کتابیں شامل ہیں۔

حالیہ واقعے نے علاقے کے لوگوں کو چراغ پا کر دیا ہے جن کا کہنا ہے کہ ایسی دہشت گردی اور مجرمانہ کارروائی کا ارتکاب تو داعش کے ارکان نے بھی نہیں کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں