.

شام میں ایرانی پروپیگنڈا کے توڑ کے لیے امریکا کی ساڑھے سات کروڑ ڈالر کی گرانٹ کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا کے محکمہ خارجہ نے شام میں داعش سے لڑنے اور ایران کی ’’غلط معلومات‘‘ کی تشہیر کی روک تھام کے لیے ساڑھے سات کروڑ ڈالر کا ایک فنڈ قائم کیا ہے۔اس گرانٹ میں سے جنگ زدہ ملک میں امریکی حکومت کی پالیسی کو آگے بڑھانے والی غیر سرکاری تنظیموں ( این جی اوز ) کو رقوم دی جائیں گی۔

محکمہ خارجہ کے بیورو برائے مشرقِ قریب امور کے مطابق اس گرانٹ کا مقصد شام میں مقامی نظم ونسق اور سول سوسائٹی کی مدد کرنا ہے اور یہ صرف اہل این جی اوز ہی کو دی جائے گی مگر ان کی اہلیت کے معیار کی وضاحت نہیں کی گئی ہے۔

بیورو نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس گرانٹ کا مقصد شام میں داعش کی شکست کو یقینی بنانا ،متشدد انتہا پسندی کا توڑ کرنا اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد نمبر 2254 کے مطابق ملک میں جاری تنازع کا سیاسی حل تلاش کرنا ہے۔

اس گرانٹ کی تقسیم کا ایک اور بڑا مقصد یہ بیان کیا گیا ہے کہ اس سے ایرانی فورسز ، دہشت گرد قرار دی گئی تنظیموں اور دوسرے تخریبی کرداروں کے پھیلائے گئے زہریلے پروپیگنڈے اور غلط معلومات کا مقابلہ کرنا ہے ۔ان کی خطرناک تشہیری سرگرمیوں سے نمٹنے کے لیے مقامی نظم ونسق کے کرداروں اور سول سوسائٹی کی تنظیموں کی مالی معاونت کی جائے گی۔