کرونا کے خطرات میں کمی، سعودی شہریوں کو القطیف میں آمد ورفت کی اجازت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کی وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ کرونا وبا کے خطرات میں کمی کے بعد آج جمعرات سے القطیف گورنری میں شہریوں کو آمد ورفت کی اجازت دی گئی ہے۔

سعودی عرب کی سرکاری نیوز ایجنسی 'ایس پی اے' نے وزارت داخلہ کے ایک ذمہ دار ذریعے کے حوالے سے بتایا ہے کہ انسداد کرونا کی حکومتی مہم اور وزارت صحت کی طرف سے فراہم کردہ ہدایات کے بعد جمعرات سات رمضان المبارک سے القطیف گورنری میں آمد ورفت کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ فیصلے کے تحت شہریوں کو صبح نو بجے سے شام پانچ بجے تک القطیف میں آمد ورفت کی اجازت ہوگی۔ شہریوں کی نقل وحرکت کی اجازت کے ساتھ جن سرگرمیوں کو کرونا کے دوران جاری رکھنے کی ہدایت کی گئی ہے وہ بدستور جاری رہیں گی۔

خیال رہے کہ کرونا وائرس کے خطرے کے پیش نظر سعودی حکومت نے 8 مارچ کو القطیف گورنری میں باہر سے آمد ورفت پرپابندی عاید کردی تھی۔ القطیف سعودی عرب کا پہلا شہر ہے جہاں پر ایران سے لوٹنے والے متعدد افراد میں کرونا کی تصدیق کی گئی تھی۔

ادھر ایک دوسرے سیاق میں سعودی عرب کی وزارت صحت کے ترجمان محمد العبد العالی نے بدھ کے روز ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مملکت میں کرونا کے مزید 1325 کیسز سامنے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں