.

ایرانی القدس فورس کے کمانڈر کی امریکا میں دہشت گرد کارروائیوں کی دھمکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایرانی پاسداران انقلاب کی القدس فورس کے کمانڈر اسماعیل قاآنی نے امریکا کی سرزمین پر دہشت گرد کارروائیوں کی دھمکی دی ہے۔ القدس فورس کے سربراہ نے جمعے کے روز کہا ہے کہ امریکی حملے میں جنرل قاسم سلیمانی کی ہلاکت تہران کو مزاحمت کے راستے سے ہر گز نہیں روک سکے گی۔

امریکا نے گذشتہ برس 3 جنوری 2020ء کو عراق میں ایک ڈرون حملے کے ذریعے القدس فورس کے سابق کمانڈر قاسم سلیمانی کو ہلاک کر دیا تھا۔ اس سے قبل واشنگٹن نے یہ الزام عائد کیا تھا کہ خطے میں امریکی فورسز پر ایران نواز مسلح گروپوں کے حملوں کا ماسٹر مائنڈ سلیمانی ہے۔

امریکی ڈرون حملے کے جواب میں ایران نے چند روز بعد عراق میں ایک فوجی اڈے پر بھرپور راکٹ حملہ کیا تھا۔ اس اڈے میں امریکی فوجی بھی تعینات تھے۔

قاآنی نے جمعے کے روز کہا کہ ایران اب بھی جوابی کارروائی کے لیے تیار ہے۔

وہ تہران یونیورسٹی میں قاسم سلیمانی کی برسی کے سلسلے میں منعقد ایک تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔ قاآنی کے مطابق امریکا کی جانب سے سامنے آئے والی شرپسند حرکتوں سے القدس فورس کا راستہ اور مزاحمت ہر گز تبدیل نہیں ہو گی۔

ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے گذشتہ روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ الزام عائد کیا کہ وہ ایران پر حملے کے واسطے بہانے تلاش کر رہے ہیں۔ ظریف نے باور کرایا کہ تہران پوری طاقت سے اپنا دفاع کرے گا۔