.

لبنان کی زرعی مصنوعات پر پابندی سے متعلق سعودی فیصلے کی تائید کرتے ہیں : امارات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات نے لبنان سے آنے والی زرعی مصنوعات پر پابندی سے متعلق سعودی عرب کے فیصلے کی تائید کی ہے۔ یہ پابندی منشیات کی مملکت اسمگلنگ کے لیے زرعی مصنوعات کا استعمال ثابت ہونے کے بعد عائد کی گئی ہے۔

امارات کی سرکاری خبر رساں ایجنسی (وام) کے مطابق یہ موقف اماراتی وزارت خارجہ و بین الاقوامی تعاون کی جانب سے آج اتوار کے روز سامنے آیا ہے۔ وزارت نے باور کرایا ہے کہ وہ سماج کو منشیات کی لعنت سے محفوظ رکھنے اور اس منظم جرم کی روک تھام کے لیے مملکت کی جانب سے کیے جانے والے تمام اقدامات کو سپورٹ کرتی ہے۔

امارات نے زور دیا ہے کہ اس خطرناک آفت کی اسمگلنگ پر روک لگانے کے واسطے مناسب ٹکنالوجی کا استعمال اور اقدامات کیے جائیں۔ یہ معاشروں کی سلامتی کے لیے خطرہ بننے والی لعنت ہے۔

کویت اور بحرین نے بھی گذشتہ روز سعودی عرب کے حالیہ فیصلے کی تائید کا اعلان کیا تھا۔

یاد رہے کہ سعودی عرب میں انسداد منشیات کے جنرل ڈائریکٹریٹ نے جمعے کے روز ایک اعلان میں بتایا تھا کہ لبنان سے آنے والی پھلوں کی کھیپ کے ذریعے Amphetamine کی 24 لاکھ گولیاں مملکت اسمگل کرنے کی کوشش ناکام بنا دی گئی۔ ان گولیوں کو انار کے اندر چھپایا گیا تھا۔ ڈائریکٹریٹ کے سرکاری ترجمان کے مطابق اسمگلنگ کے عمل میں ملوث 5 افراد کو حفر الباطن میں حراست میں لے لیا گیا۔ گرفتار شدگان میں چار سعودی شہری اور ایک تارک وطن شامل ہے۔