’میں چاہتا تھا کہ دادا جی روایتی رقص میں ہمارے ساتھ شامل ہوں‘

رقص کی وائرل ویڈیو میں موجود داد اور پوتا کون ہیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کے علاقے نجران میں ایک نجی محفل موسیقی میں 100 سالہ بزرگ کے روایتی رقص کی ویڈیو نےسوشل میڈیا پر دھوم مچا رکھی ہے۔ اس محفل میں 100 سالہ بزرگ اور اس کے پوتے نے بھی حصہ لیا۔

رقص کرتے بابا جی کی ویڈیو وائرل ہونے کے بعد ان کے پوتے بدر لعجم آل صالح نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ہے کہ’میں چاہتا تھا کہ میرے دادا ابو روایتی رقص میں ہمارے ساتھ شامل ہوں اور’السعبہ النجرانی‘ رقص پیش کریں۔

انہوں نے"العربیہ ڈاٹ نیٹ" کو بتایا کہ وہ لمحات بے حد خوشی سے بھرپور تھے۔ میرے دادا کے رقص کی ویڈیو سے دھوم مچ گئی۔ اس پر شہریوں کی طرف سے مزاح سے بھرپور رد عمل سامنے آیا ہے۔

بزرگ کی عمر 100 سال

بدر لعجم نے وضاحت کی کہ ان کے دادا جن کی عمر سو سال ہے،بھرپور زندگی گذارنے عاشق ہیں۔ میں چاہتا ہوں کہ میرے دادا میرے بیٹے کی شادی کی تقریب میں شرکت کریں اور وہاں بھی وہ روایتی رقص پیش کریں۔

انہوں نے اس بات کی بھی تصدیق کی کہ اس رقص نے شرکاء کے جوش میں اضافہ کیا کیونکہ اس سے اُنہیں اس قسم کے لوک فن میں حصہ لینے کا موقع ملا اور ان کے دادا بہت خوش ہوئے۔

بدر لعجم نے وضاحت کی کہ اسے ویڈیو پرآنے والے تمام ردعمل کی توقع نہیں تھی کیونکہ اس نے یہ بے ساختہ کیا۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ نجران میں لوک داستانوں کو نجران کے معاشرے کی سب سے اہم خصوصیات میں سے ایک سمجھا جاتا ہے۔ یہ علاقہ عوامی فنکارانہ رنگوں میں ایک بڑا مقام رکھتا ہے اور یہ روایتی رقص تمام سماجی تقریبات میں پیش کیاجاتا ہے۔

نجران کے لوگ خوشی کے مواقع پراس عوامی روایتی رقص کا اہتمام کرتے ہیں۔صرف بڑے ہی نہیں بلکہ بچے بھی اس میں بھرپور طریقے سے حصہ لیتے ہیں۔

نجران لوک فنون کے لیے مشہور ہے۔ اس علاقے میں سعب، الرازفہ، زامل اور ڈھول بجانا اور گھوڑ سواری جیسے روایتی کھیل اور رقص پیش کیے جاتے ہیں۔

خیال رہےکہ حال ہی میں نجران میں ایک نجی محفل موسیقی میں ایک بزرگ کے روایتی رقص پیش کرنے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تھی جس میں ایک بزرگ کو ایک نوجوان کے ساتھ کھڑ ہو کر رقص کرتے دیکھا جا سکتا ہے۔ بزرگ اس نوجوان کے دادا ہیں جو اس روایتی رقص کے ماہر سمجھے جاتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں