حج وعمرہ

حرم مکی میں زائرین کی حفاظت پر مامور عمرہ سکیورٹی فورس کی اہم ذمہ داریاں کیا ہیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مسجد حرام میں زائرین اور معتمرین کی حج اور عمرہ سیزن میں سکیورٹی کی ذمہ داریاں انجام دینے کے لیے کئی سکیورٹی سروسز کام کررہی ہیں۔

ہجوم کو کنٹرول کرنا حج اور عمرہ سیزن میں حرم مکی میں سب سے اہم چیلنج ہوتا ہے جومسجد الحرام میں نمازیوں اور زائرین کے بہاؤ کو کنٹرول کرنے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ اس حوالے سے مرد عمرہ سکیورٹی فورسز بنیادی کردارادا کرتی ہے۔

مسجد الحرام میں عمرہ سکیورٹی فورسز کی ذمہ داری اس وقت شروع ہوتی ہے جب زائرین حرم مکی کے مرکزی حصے میں پہنچتے ہیں۔ اس کے بعد مسجد کے صحنوں تک پھیلے زائرین کو کنٹرول کرنا عمرہ سکیورٹی کی ذمہ داری ہے۔

وزارت داخلہ کے آفیشل اکاؤنٹ کے مطابق تربیتی فورس عمرہ سکیورٹی فورسز مسجد الحرام کے مغربی حصے، شمالی صحنوں اور سعودی عرب کے دور میں ہونے والی مسجد کی تیسری توسیع میں ہجوم کی نقل و حرکت کو منظم کرتی ہے۔ سکیورٹی پلان کے تحت عمرہ تربیتی فورس ابراہیم الخلیل سٹریٹ کے شمال اور جنوب میں متعین مقامات میں بھی سکیورٹی مہیا کرتی ہے۔

عمرہ سکیورٹی فورس حرم مکی میں تین اہم بیرونی مقامات پر تعینات ہوتی ہے جن میں جبل کعبہ،حفائر پوائنٹ، اور خرزہ پوائنٹ شامل ہیں۔

تربیتی فورس کے کاموں میں سب سے پہلے بیت اللہ میں آنے والے زائرین کی حفاظت اوران کو سلامتی کو برقرار رکھنا ہے۔ ان کے راستوں اور گذرگاہوں کو محفوظ بنا اور اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ زائرین راستوں میں نہ بیٹھیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں