سعودی عرب: ننھے تربوز فروش پر تشدد کے واقعے کا نوٹس، ملزم گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کے علاقے الجوف میں تربوز فروخت کرنے والےایک بچے پرنامعلو شخص کی طرف سے تشدد کے واقعے پر عوامی حلقوں کی طرف سے شدید برہمی کا اظہار کیا جا رہا ہے۔ دوسری طرف پولیس نے واقعے کی تحقیقات کرتے ہوئے ملزم کی گرفتاری کا دعویٰ کیا ہے۔

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے ایک ویڈیو کلپ میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک نامعلوم شخص تربوز بیچنے والے بچے کی مارپیٹ کررہا ہے جو بہ ظاہر لگتا ہے کہ تربوز خریدنا چاہتا ہے۔ وہ شخص بچے کی ریڑی الٹ کرفرار ہو جاتا ہے۔

کلپ میں بچے کو تربوز "پلیٹ فارم" کے سامنے کھڑے دیکھا جا سکتا ہے۔ جسے کاٹ کر تباہ کردیا گیا، جب کہ اس منظر سے مشتعل اس کے والد نے حملہ آور کی ویڈیو بنائی۔

بچے کے والد کا کہنا ہے "اگر یہ شخص دماغی مریض ہے تو میں خدا سے دعا کرتا ہوں کہ وہ اس کا دماغ بحال کردے۔"

ملزم گرفتار

دوسری طرف پولیس نے ویڈیو کے سوشل میڈیا پروائرل ویڈیو کی چھان بین کے بعد ملزم کو گرفتار کرکے اس کے خلاف قانونی کارروائی شروع کردی ہے۔ اگرچہ اس واقعے کی کوئی ایف آئی آر درج نہیں کرائی گئی ہے، اس کے باوجود پولیس نے ملزم کے خلاف کارروائی شروع کردی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں