جنگ کے عذاب سے نجات پانے والی سوڈانی خاتون سعودی عرب کی سپاس گذار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سوڈان میں حالیہ خانہ جنگی کے باعث نقل مکانی کرکے دوسرے ملکوں میں آنے والے شہری جہاں اپنے وطن دوری کے دُکھ اور صدمے کا شکارہیں وہیں وہ میزبان ملکوں کی طرف سے سروس فراہم کرنے پر ان کے شکر گذاربھی ہیں۔

سوڈان سے انخلاء کے بعد سعودی عرب آنے والی ایک بزرگ خاتون نے مملکت کی طرف سے فراہم کی جانے والی سہولیات اور سروسز پرسعودی حکومت کا شکریہ ادا کیا ہے۔ سوڈانی خاتون نے سعودی حکومت اور عوام کا شکریہ ادا کیا ہے۔ وہ غریب الوطنی کا دکھ اٹھا رہی ہیں مگروہ سعودی عرب میں آنے کے بعد پرامید بھی ہیں۔

فن کار فائز المالکی نےاپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر درد بھرے الفاظ پر مبنی یہ پیغام نشر کیا ہے۔ سوڈانی خاتون نے سعودی عوام کے نام ایک دل کو چھو لینے والا پیغام دیتے ہوئے اپنے ملک کےتکلیف دہ حالات بیان کیےہیں۔

فنکار فائز لمالکی نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پرایک متاثرکن ویڈیو کلپ نشر کیا۔ پورٹ سوڈان سے سعودی عرب کے نیول بیس پر آنے والی خاتون کا یہ ویڈیو بہت مقبول ہوا۔ خاتون کو یہ کہتے سنا جا سکتا ہے کہ "آپ ایک نعمت میں ہیں، اس پر اللہ کا شکر ادا کریں اور اللہ آپ کو شاہ سلمان اور ولی عہد محمد بن سلمان عطا کرتا ہے"۔

سوڈانی خاتون کا کہنا تھا کہ اسے پہلی بار اپنے ملک میں جنگ کی لعنت کی وجہ سے نقصان اٹھانا پڑا۔ نمک پلکوں کے ساتھ اس کا کہنا تھا کہ ہمیں پینے کے پانی، وضو یا نہانے پانی تک میسر نہیں تھا‘‘۔

انہوں نے سعودی عرب اور اس کی قیادت کا بھی شکریہ ادا کیا کہ ان کی انتھک اور عظیم کوششوں پر سوڈان سے سوڈانی اور غیر ملکی شہریوں کو ملک میں جاری ہنگامہ آرائی سے بچانے میں مدد کی۔

سعودی عرب کی جانب سے سوڈان سے ممالک کے شہریوں کو نکالنے کی کوششیں جاری ہیں۔گذشتہ منگل کو شاہی سعودی بحریہ کا جیا "ریاض" جہاز جدہ پہنچا تھا۔

سعودی وزارت خارجہ نے منگل کو اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ کے ذریعے یہ بات کہی کہ انخلاء کے آغاز سے اب تک سوڈان سے نکالے جانے والوں کی کل تعداد تقریباً 5,629 افراد تک پہنچ گئی ہے جن کا تعلق 102 ممالک سے ہے جن میں 239 سعودی شہری بھی شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں