شام میں سعودی سفارت خانہ دوبارہ کھولنے پر تبادلہ خیال کے لیے تکنیکی ٹیم کی دمشق آمد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

دمشق میں سعودی عرب کا سفارت خانہ دوبارہ کھولنے پربات چیت کے لیے ایک تکنیکی ٹیم ہفتے کے روز شام پہنچ گئی ہے۔

سعودی پریس ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق وزارتِ خارجہ کے عہدہ دار غازی بن رافع العنزی کی سربراہی میں وفد نے دارالحکومت دمشق میں وزارتِ خارجہ کے صدر دفتر میں شام کے معاون وزیر خارجہ برائے تارکینِ وطن ایمن سوسان سے ملاقات کی۔

اس موقع پر العنزی نے پرتپاک استقبال اور آمد کے عمل کو آسان بنانے پر ایمن سوسان کا شکریہ ادا کیا۔شامی عہدہ دار نے کہا کہ ان کی وزارت سعودی ٹیم کے کام کو آسان بنانے اور تمام ضروری مدد مہیا کرنے کے لیے مکمل طور پر تیار ہے۔

گذشتہ ماہ سعودی عرب اور شام نے سفارتی تعلقات بحال کرنے پر اتفاق کیا تھا۔سعودی عرب کے وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے 18 اپریل کو شامی دارالحکومت دمشق میں صدر بشار الاسد سے ملاقات کی۔ انھوں نے شامی وزیر خارجہ فیصل مقداد کے سعودی عرب کے دورے کے چند روز بعد یہ ملاقات کی تھی۔

سعودی عرب نے نو مئی کو اعلان کیا تھا کہ وہ شام میں خانہ جنگی اور ایک دہائی سے زیادہ عرصے کے بعد اپنے سفارت کاروں کو دمشق میں دوبارہ کام شروع کرنے کی اجازت دے گا۔

اسی ماہ 12 سال کی معطلی کے بعد شام کو عرب لیگ میں دوبارہ شامل کیا گیا ہے اور صدر بشارالاسد نے گذشتہ ہفتے جدہ میں لیگ کے 32 ویں سربراہ اجلاس میں شرکت کی تھی جہاں انھوں نے اس اجلاس کو خطے میں بحرانوں سے نمٹنے کا ’تاریخی موقع‘ قرار دیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں