عراقی عدلیہ نے سویڈن میں قرآن جلانے والے گستاخ کے گرفتار وارنٹ جاری کر دیئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جمعرات کو عراق کی سپریم جوڈیشل کونسل نے سویڈن میں گذشتہ ہفتے قرآن پاک کے اوراق نذرآتش کرنے کے گھناؤنے جرم میں ملوث سلوین مومیکا نامی گستاخ کے خلاف گرفتاری کا وارنٹ جاری کیا ہے۔

عراق میں سپریم جوڈیشل کونسل کی طرف سے جاری کردہ ایک میمورنڈم میں وزارت داخلہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا گیا ہے "فوری طور پر، عرب اور بین الاقوامی پولیس ڈائریکٹوریٹ کو ملزم سلوان صباح متی مومیکا کی گرفتاری کے وارنٹ کے بارے میں آگاہ کرتےاسے اس کی گرفتاری کا مطالبہ کرتے ہیں۔ ملزم عراقی پینل کوڈ کے آرٹیکل (1)/372 کی دفعات کےتحت عراقی عدلیہ کو مطلوب ہے، توقع ہے عالمی ادارے اشتہاری ملزم کو پکڑنے اور اسے عراق کے حاولے کرنے میں مدد کریں گے‘۔

میمورنڈم میں حکام سے مطالبہ کیا گیا کہ وہ ملزم کی گرفتاری کی صورت میں عراقی عدلیہ کو مطلع کریں تاکہ اس کے خلاف کارروائی شروع کی جا سکے۔

عراق نے سویڈن سے کہا تھا کہ عیدالاضحی کے پہلے دن اسٹاک ہوم کی سب سے بڑی مسجد کے سامنے قرآن پاک کو جلانے والےگستاخ کو مقامی قانون کے مطابق مقدمہ چلانے کے لیے اس کےحوالے کیا جائے۔

عراقی وزارت خارجہ کے ترجمان احمد الصحاف نے کہا کہ "قرآن پاک کی توہین کرنے والا عراقی ہے۔ اس لیے ہم سویڈش حکام سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اسے عراقی حکومت کے حوالے کیا جائے تاکہ اس پر عراقی قانون کے مطابق مقدمہ چلایا جا سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں