سعودی عرب: صحراء میں نخلستان، بریدہ میں ایک ملین پودوں کی شجرکاری کا منصوبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کے وسط میں ریت کے ٹیلوں ، ہموار اراضی اور میدانوں کے بیچ 12 ملین مربع میٹرکے رقبے پر ایک زرعی علاقہ تیار کیا جا رہا ہے جس میں پانچ لاکھ پودوں کی شجرکاری کا منصوبہ ہے۔

القصیم کے علاقے میں "بریدہ نخلستان" اپنی منزل کی طرف بڑھ رہا ہے۔ یہ القصیم ریلوے اسٹیشن اور شہزادہ نائف بن عبدالعزیز ہوائی اڈے کے قریب ہونے کی وجہ سے اپنے اسٹریٹجک محل وقوع سےمنفرد مقام رکھتا ہے۔

شمالی سیکٹرمیں محکمہ ماحولیات کے ڈائریکٹر اور شجرکاری کمیٹی کے چیئرمین انجینیر محمد الدخیل ابو شیل نے ’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کو اپنے بیان میں کہا کہ ہم نخلستان میں 10 لاکھ پودے لگانے کا ہدف رکھتے ہیں۔ ہم اپنے ہدف کو حاصل کرنا چاہتے ہیں۔

اس نخلستان میں الطلح، القرض، السمر، السدر، خلیجی غاف اور دیگر شامل ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ آبپاشی کے نیٹ ورک کے حوالے سے ایک بڑے آبپاشی نیٹ ورک کو نئے پانی کی مین لائن کے ذریعے نافذ کیا گیا ہے جو بریدہ شہرکو چھوڑ کر مختلف اور طویل قطروں کے ساتھ 2.5 ملین لکیری میٹر سے زیادہ ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ بریدہ نخلستان پراجیکٹ کا ہدف اس سال کے دوران 10 لاکھ درخت لگانا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں