چھاتی کے کینسر کی تشخیص کے فروغ کے لیے سعودی وزارتِ صحت اور جی ای ہیلتھ کیئرمیں تعاون

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
5 منٹس read

سعودی عرب میں وزارتِ صحت (ایم او ایچ) اور جی ای ہیلتھ کیئر نے صحت کی نگہداشت کے ایک انقلابی اقدام کا آغاز کرنے کے لیے ایک مفاہمت کی یادداشت (ایم او یو) پر دستخط کیے ہیں جس کا مقصد چھاتی کے کینسر کی تشخیص کو بہتر بنانا اور مملکت میں نگہداشت تک رسائی کو بڑھانا ہے۔ یہ تعاون خواتین کے لیے بہتر نتائج اور بہترین نگہداشت میں کردار ادا کرنے کے لیے ایک اہم قدم کی نمائندگی کرتا ہے۔

مفاہمت نامے کے تحت فریقین نے 'ون اسٹاپ بریسٹ پلس ڈائیگنوسٹک پاتھ وے پروگرام' کو مشترکہ طور پر ڈیزائن کرنے کے لیے 90 دن کے تعاون کے معاہدے کا عہد کیا ہے تاکہ مملکت میں خواتین کی بڑھتی ہوئی تعداد کی پریشان کن تشویش کو دور کیا جا سکے جن میں چھاتی کے کینسر کی تشخیص آخری مرحلے میں داخل ہو رہی ہے۔ مملکت میں چھاتی کے کینسر کے 50 فیصد سے زیادہ کیسز میں تشخیص تاخیر سے ہوتی ہے جبکہ ترقی یافتہ ممالک میں یہ شرح 20 فیصد ہے۔

مفاہمت نامہ جس پر ریاض میں 2023 گلوبل ہیلتھ میں دستخط کیے گئے، سعودی وژن 2030 کے نگہداشت کے نئے ماڈل کے ساتھ ہم آہنگ ہے جو بیماریوں کے انسداد اور صحت سے متعلق آگاہی پر مرکوز ہے اور تشخیص کے لیے وقت کے وقفوں کو کم کرکے اور مریض کے مجموعی تجربے کو بہتر بنا کر چھاتی کی نگہداشت کے راستے پر سعودی خواتین کے تجربے کو بڑھا سکتا ہے۔ بروقت مداخلتوں پر توجہ کے ذریعے ’ون اسٹاپ بریسٹ پلس ڈائیگنوسٹک پاتھ وے پروگرام‘ ایسے مریضوں کی تعداد کو کم کرنے میں بھی مدد کر سکتا ہے جنہیں طبی توجہ کی ضرورت ہوتی ہے اور مزید خواتین کو صحت یابی کی راہ پر گامزن کر سکتا ہے۔

میڈیکل ریفرلز سنٹر اور سعودی وزارتِ صحت کے لیڈنگ ماڈل آف کیئر پروگرام کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ڈاکٹر نوفل عبداللہ الجیرین نے کہا: "سعودی عرب کے ویژن 2030 کے بصیرت افروز اہداف کے مطابق وزارتِ صحت جی ای ہیلتھ کیئر کے تعاون سے 'ون اسٹاپ بریسٹ پلس ڈائیگنوسٹک پاتھ وے پروگرام' پیش کرتی ہے جو چھاتی کے کینسر کا مقابلہ کرنے میں جلد پتہ لگانے کی نازک اہمیت پر مرکوز ہے۔ ہماری قوم فروغ پزیر معاشرے کے لیے کوشاں ہے تو ہم تسلیم کرتے ہیں کہ خواتین کو علم کے ساتھ بااختیار بنانا اور ان کی فلاح و بہبود کو یقینی بنانا ہماری ترقی کا مرکز ہے۔ اس متحرک شراکت کے ذریعے ہمارا مقصد ایک ایسا مستقبل بنانا ہے جہاں ہر عورت کو چھاتی کے کینسر کی اعلیٰ معیار کی سکریننگ اور ابتدائی مداخلت تک رسائی حاصل ہو جس سے صحت، لچک اور امید کے حامل معاشرے کو فروغ ملے۔"

جی ای ہیلتھ کیئر کے ریجنل جنرل منیجر برائے سعودی عرب محمد الخوری نے کہا: "چھاتی کا کینسر عالمی صحت کے حوالے سے ایک اہم تشویش کا باعث ہے اور سعودی عرب میں کینسر کی سب سے زیادہ تشخیص شدہ قسم ہے۔ مملکت میں چھاتی کے کینسر کے واقعات میں اضافے کی وجہ سے اسکریننگ کی مؤثر حکمت عملیوں کے ذریعے جلد پتہ لگانا اور بروقت تشخیص بیماری کے بوجھ کو کم کرنے کے لیے اہم ہے۔ سعودی عرب میں صحت کی نگہداشت کی فراہمی کو آگے بڑھانے کے عزم سے ہم آہنگی میں ہمیں فخر ہے کہ ہم چھاتی کے کینسر کی تشخیص کے لیے ایک ہموار تر اور مؤثر طریقہ فراہم کرنے میں وزارتِ صحت کی مدد کر رہے ہیں جو مریضوں اور ان کی نگہداشت کرنے والوں کی ضروریات کو بہترین طریقے سے پورا کرتا ہے۔ جدت اور ٹیکنالوجی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے اور ایک کثیر الشعبہ ٹیم کے ذریعے ون اسٹاپ بریسٹ پلس ڈائیگنوسٹک پاتھ وے پروگرام ایک اہم اقدام ہے جو مملکت میں چھاتی کے کینسر میں مبتلا خواتین کے لیے اعلیٰ معیار کی نگہداشت فراہم کر سکتا ہے اور صحت کے نتائج کو بڑھا سکتا ہے۔"

ون اسٹاپ بریسٹ پلس ڈائیگنوسٹک پاتھ وے پروگرام میں تعاون کے ذریعے وزارتِ صحت اور جی ای ہیلتھ کیئر اس کے کامیاب نفاذ کے لیے اہم اجزاء کی نشاندہی کرے گی جس میں صلاحیتوں کی تعمیر اور مطلوبہ بنیادی ڈھانچے کی ترقی شامل ہے۔

دونوں ادارے صحیح سہولت کی نشاندہی کرنے کے لیے مل کر کام کریں گے جو مملکت میں چھاتی کے کینسر کے راستے کو بہترین بنانے کے لیے ممکنہ پائلٹ کے طور پر کام کر سکتی ہے۔ ون اسٹاپ بریسٹ پلس سلوشن کے آغاز سے پہلے وزارتِ صحت اور جی ای ہیلتھ کیئر اس کے مؤثر نفاذ کے لیے قابلِ عمل حکمت عملی وضع کرے گی جس میں کام کے دائرۂ کار کی نشاندہی، سہولیات کی تعداد اور مقامات، نفاذ کے لیے ٹائم لائنز، پروگرام کی فنڈنگ اور دیگر شامل ہیں۔

ون اسٹاپ بریسٹ پلس ڈائیگنوسٹک پاتھ وے پروگرام صحت کی نگہداشت اور وزارتِ صحت دونوں کے مشترکہ وژن پر تعمیر ہوا ہے تاکہ مملکت کے صحت کی نگہداشت کے منظر نامے کو بہتر اور مزید خواتین کو صحت کے بارے میں فعال ہونے کے لیے بااختیار بنایا جا سکے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں