ایران میں پولیس اسٹیشن پر مسلح افراد کے حملے میں 11 افراد ہلاک، متعدد زخمی: رپورٹ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سرکاری ٹی وی نے جمعہ کو بتایا کہ ایک علیحدگی پسند گروپ کے مشتبہ ارکان نے جنوب مشرقی ایران میں ایک پولیس اسٹیشن پر رات کے وقت حملے میں 11 افراد کو ہلاک اور متعدد کو زخمی کر دیا۔

صوبہ سیستان اور بلوچستان کے نائب گورنر علی رضا مرحمتی نے بتایا کہ تہران سے تقریباً 1400 کلومیٹر (875 میل) جنوب مغرب میں واقع راسک ٹاؤن میں صبح 2 بجے کے حملے میں سینئر پولیس افسران اور سپاہی مارے گئے۔

انہوں نے کہا کہ پولیس نے فائرنگ کے تبادلے میں کئی حملہ آوروں کو ہلاک کر دیا۔

سرکاری ٹی وی نے اس حملے کا الزام ایک علیحدگی پسند گروپ جیش العدل پر عائد کیا۔ 2019 میں جیش العدل نے ایک بس پر خودکش بم حملے کی ذمہ داری قبول کی تھی جس میں ایران کی پاسدارانِ انقلاب فورس کے 27 ارکان ہلاک ہو گئے تھے۔

حالیہ مہینوں میں عسکریت پسندوں اور چھوٹے علیحدگی پسند گروپوں نے سنی اکثریتی علاقے میں حکومت کے خلاف نچلی سطح کی شورش کے ایک حصے کے طور پر پولیس تھانوں پر حملے کیے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں