فلسطین اسرائیل تنازع

اسرائیل رفح پر حملے کے منصوبے سے باز رہے : عالمی ادارہ صحت کی اپیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

عالمی ادارہ صحت کے سربراہ ٹیڈروس غیبرئیس نے اسرائیل سے اپیل کی ہے کہ غزہ کے جنوبی شہر رفح پر حملے کا منصوبہ انسانی بنیادوں پر ختم کر دے کہ رفح شہر میں اس وقت غزہ کے پناہ گزینوں کی سب سے بڑی آبادی رفح پناہ لیے ہوئے ہے۔

سوشل میڈیا پلیٹ فارم ' ایکس ' پر لکھے گئے اپنے بیان میں عالمی صحت کے سربراہ نے کہا ' میں ان رپورٹس کے سامنے آنے پر سخت تشویش محسوس کرتا ہوں کہ اسرائیل رفح پر زمینی حملہ کرنے والا ہے۔ '

ٹیڈروس غیبرئیس کے مطابق ' اس انتہائی گنجان آباد ہو چکے شہر میں تشدد کو بڑھانا مزید ہلاکتوں کا باعث بنے گا۔ اس لیے انسانیت کی بنیاد پر ہم اپیل کرتے ہیں کہ اسرائیل اس حملے کی طرف نہ بڑھے بلکہ امن کے لیے کام کرنے کی طرف بڑھے۔'

واضح رہے اقوام متحدہ کے اندازے کے مطابق اس وقت رفح میں 15 لاکھ فلسطینی غزہ کے مخلتلف علاقوں سے پناہ کے لیے رفح میں منتقل ہو کر رہ رہے ہیں۔ پناہ گزینوں کی یہ تعداد غزہ کی کل نصف آبادی سے بھی زیادہ ہے۔

عالمی ادارہ صحت کے سربراہ نے کہا ' حملے سے پہلے آبادی کا انخلا کرنے کا اسرائیلی منصوبہ بھی اس مسئلے کا حل نہیں ہے۔ کیونکہ کم از کم 12 لاکھ لوگ جو اس وقت رفح میں رہ رہے ہیں ان کے پاس کوئی اور جائے پناہ نہیں ہے کہ یہ وہاں منتقل ہو جائیں۔'

ان کے لیے کسی بھی جگہ غزہ میں جگہ ہے اور نہ ہی صحت کی سہولت یا نظام کہ وہاں منتقل ہو جائیں۔ ان میں سے بہت سارے لوگوں کا حال ہے کہ وہ عملاً لاغر ہو چکے ہیں، ان کے پاس کھانے تک کو کچھ نہیں،وہ اس قدر کمزور ہیں کہ چل بھی نہیں سکتے، وہ بھوکے ہیں اس لیے انسانی تباہی کے اس ( اسرائیلی ) منصوبے کو ضرور روکا جانا چاہیے۔'

ادارہ صحت کے سربراہ کا یہ بیان اسرائیلی وزیر اعطم نیتن یاہو کے دفتر سے جاری کردہ اس بیان کے بعد سامنے آیا ہے کہ نیتن یاہو نے رفح پر حملہ کرنے کے فوجی منصوبے کی منظوری دے دی ہے۔'

اقوام متحدہ اور امریکہ نے بھی کئی بار اسرائیل کے اس ممکنہ جنگی منصوبے کے بارے میں خبر دار کیا ہے کہ یہ بہت تباہ کن ہو گا۔

جبکہ نیتن یاہو کئی ہفتوں سے رفح پر اسرائیلی فوج کے منظم زمینی حملے کی بات کر رہے ہیں اور اپنی جنگ کے منطقی مقصد کا حصہ بتاتے ہیں کہ حماس کے مکمل خاتمے کے لیے یہ ضروری ہے۔

یاد رہے اب تک اسرائیلی فوج کی غزہ میں جنگ کو 162 دن ہو چکے ہیں اور اس دوران 31553سے زائد فلسطینی قتل کیے جا چکے ہیں، جبکہ تقریباً 23 لاکھ بے گھر ہیں اور نقل مکانی پر مجبور ہیں۔ ان حالات میں اسرائیلی فوج ابھی تک حماس کے خاتمے کے نام پر جنگ کو جاری رکھنے پر مصر ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں